وفاقی، صوبائی بجٹ میں ضلع مظفرگڑھ نظرانداز، عوام مایوس

  وفاقی، صوبائی بجٹ میں ضلع مظفرگڑھ نظرانداز، عوام مایوس

  

چوک سرورشہید(سٹی رپورٹر)وفاقی و صوبائی بجٹ میں ضلع مظفرگڑھ کی عوام کے لئے کوئی بھی بڑا منصوبہ نہ دینے پر ضلع مظفرگڑھ کی عواممیں مایوسی کی لہر دوڑ گئیتفصیل کے مطابق ضلع مظفرگڑھ اور چوک سرورشہید کی اہم سیاسی شخصیات پیپلز پارٹی کے ایم این اے مہر ارشاد سیال،سابق ایم این اے جمشید احمد خان دستی، سابق مسلم لیگ ن کے ایم این ا ے ملک سلطان ہنجرا،سابق ایم پی اے پیپلزپارٹی چوہدری احسان الحق نولاٹیہ، ایم پی اے ملک قاسم ہنجرا، سابق صوبائی وزیر(بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

ملک احمد یار ہنجرا،ایم پی اے سردار اظہر عباس خان چانڈیہ چوک سرورشہید کے شہریوں طارق محمود، تاجر رہنماؤں سہیل احمد، چوہدری منظور احمد، سابق ناظم حاجی عبدالستار چوہدری،سابق وائس چئیرمین چوہدری ذوالقرنین حیدر باجوہ،چوہدری امین گل ایڈووکیٹ، محمد علی خان کلاچی ایڈووکیٹ، ملک غلام مرتضیٰ کالرو ایڈووکیٹ، چوہدری طارق ظہور، ڈاکٹر امین محسن چوہدری فخر مشتاق گورائیہ اور دیگر نے وفاقی و صوبائی بجٹ پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے سابقہ حکومتوں کے دور میں بڑے بلند و بانگ دعوے کئے تھے۔ اپنے تین سال کے دور حکومت نے عوام کو سوائے عذابوں کے کچھ نہ دیا ہے۔جنوبی پنجاب صوبہ پہلے چھے ماہ میں بنانے کے دعوے کئے گئے لیکن تین سال بعد بھی عمل نہ ہوسکا۔ موجودہ بجٹ میں ضلع مظفرگڑھ کی عوام کو سوائے مایوسیوں کے کچھ بھی نہ ملا ہے ضلع مظفرگڑھ کو ایک بھی بڑا منصوبہ نہ دیا گیا ہے43 لاکھ کی آبادی والے ضلع کی عوام کو نظر انداز کردیا گیا۔ چوک سرورشہید کو تحصیل کا درجہ دینے کا عمران خان کی موجودگی میں اعلان کیا گیا لیکن موجودہ صوبائی بجٹ میں اس کے لئے کوئی فنڈ نہ رکھا گیا۔ ضلع مظفرگڑھ میں ایک یونیورسٹی قائم کی جائے، چوک سرورشہید کو تحصیل کا درجہ دینے کے اعلان پر فوری عمل درآمد کیا جائے، ملتان تا میانوالی روڈ جو کہ قاتل روڈ بن چکا ہے۔ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے اسے فوری طور پر دور ویہ کیا جائے۔ مظفرگڑھ تا علی پور روڈ بھی دورویہ کیا جائے۔ ضلع مظفرگڑھ میں ایک بھی بین الاقوامی سٹینڈر کا ہسپتال موجود نہ ہے، یہاں جدید ترین ہسپتال اور کارڈیالوجی ہسپتال بنایا جائے بجٹ میں تبدیلی کرکے مظفرگڑھ ضلع کے لئے فنڈز رکھے جائیں۔

مایوس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -