نشے کے عادی ماں باپ نے اپنی لت پوری کرنے کے لیے نومولودبچہ 14 لاکھ روپے کا بیچ دیا

نشے کے عادی ماں باپ نے اپنی لت پوری کرنے کے لیے نومولودبچہ 14 لاکھ روپے کا بیچ ...
نشے کے عادی ماں باپ نے اپنی لت پوری کرنے کے لیے نومولودبچہ 14 لاکھ روپے کا بیچ دیا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) چین میں منشیات کی لت میں مبتلا ایک نوعمر میاں بیوی نے اپنا نوزائیدہ بیٹا انٹرنیٹ پر فروخت کر ڈالا۔ میل آن لائن کے مطابق چین کے شہر نی جیانگ کے رہائشی اس شخص کا نام وینگ اور اس کی بیوی کا نام ژونگ ہے جنہوں نے ایک چیٹنگ پلیٹ فارم پر بچے کی فروخت کی ڈیل کی۔ بچے کے خریدار جوڑے سے تمام معاملات انٹرنیٹ پر اسی چیٹنگ پلیٹ فارم پر طے پائے اور انہوں نے ان سے 7ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 14لاکھ 42ہزار روپے)وصول کرکے بچہ ان کے حوالے کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق خریدار جوڑے کے ہاں اولاد نہیں تھی۔ بچہ فروخت کرنے والا جوڑا منشیات اور دیگر جرائم کی وجہ سے پولیس کے ریڈار پر تھا چنانچہ بچہ بیچنے کے اگلے روز ہی پولیس نے انہیں گرفتار کر لیا۔ میاں بیوی ایک ہوٹل میں مقیم تھے جہاں پولیس پہنچی تو کیا دیکھتی ہے کہ انہوں نے بچے کی فروخت سے حاصل ہونے والی رقم سے منشیات کی بھاری مقدار خرید رکھی تھی۔ ہوٹل کے اس کمرے سے میتھ کی کئی بوتلیں، دیگر نشہ آور ادویات اوربچ جانے والے کیش کی گڈیاں پڑی ہوئی تھیں۔وینگ اور ژونگ کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔پولیس نے بچے کو بھی بازیاب کرا لیا اور اسے اس کے دادا دادی کے حوالے کر دیا گیا جو اب اس کی نگہداشت کر رہے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -