محنت میں عظمت، فوڈ پانڈا کے رائیڈز کو لوٹنے کے بعد ڈاکو نے لوٹا گیا مال واپس کرکے گلے لگا لیا،ویڈیو وائرل

محنت میں عظمت، فوڈ پانڈا کے رائیڈز کو لوٹنے کے بعد ڈاکو نے لوٹا گیا مال واپس ...
محنت میں عظمت، فوڈ پانڈا کے رائیڈز کو لوٹنے کے بعد ڈاکو نے لوٹا گیا مال واپس کرکے گلے لگا لیا،ویڈیو وائرل

  

کراچی (ویب ڈیسک)شہرقائد میں فوڈپانڈا کے رائیڈر کو لوٹنے کی سی سی ٹی وی فوٹیج سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر وائرل ہوگئی۔

15جون کو محمد نعمان معمول کے مطابق ناظم آباد کے سیکٹر 1میں روزمرہ ڈیوٹی پر تھا کہ جہاں اس کا سامنا دو موٹرسائیکل سواروں سے ہوا جنہوں نے اسے لوٹنے کی کوشش کی، ایسا منظر پاکستان کی گلیوں میں تقریباً ہر روز ہوتا ہے تاہم فوڈ پانڈا کے رائیڈر کیساتھ پیش آنیوالے واقعے کے دوران غیرمعمولی موڑآگیا۔ سی سی ٹی وی فوٹیج کے مطابق ماسک لگائے موٹرسائیکل پر سوار دو افراد نے ڈیلیوری رائیڈر ک اس وقت روک لیا جب وہ اپنا آرڈر پہنچا کر نکل رہا تھا جبکہ دیگر لوگ پاس سے گزرتے رہے، ڈاکوؤں نے متاثرہ کو ہراساں کرکے لوٹنا شروع کردیا تاہم پھر اپنے ہی’شکار‘ سے گلے ملتے اور ہاتھ ملاتے دیکھتے گئے، چھینی گئی تمام چیزیں بھی واپس کردیں، اس واقعے نے پورے پاکستان میں لوگوں کو حیران کردیا۔

متاثرہ نوجوان نعمان نے رونا شروع کردیا اور ڈاکوؤں سے مال واپس کرنے کی درخواست کی، دونوں افراد نے نعمان کی استدعا پر نقدی واپس کردی، رحم دلی اور احساس جیسے جذبات پر مبنی یہ ویڈیو گزشتہ ہفتے پاکستان میں سوشل میڈیا پرسب سے زیادہ دیکھی جانیوالی ویڈیوز میں سے ایک تھی۔

نعمان کاکہناہے کہ ”ایک لمحے کے لیے میں کنفیوز ہوگیا تھا، اگرمجھے پتہ ہے کہ وہ کون تھے کیونکہ وہ میری طرف آئے تو سلام کیااور کہا کہ آپ کیسے ہو؟ وغیرہ، جب مجھے احساس ہوا کہ کیا ہوگیا اور انہیں جاتے ہوئے دیکھا، میں نے انہیں نقدی اور فون واپس کرنے کو کہا، میں رونے بھی لگ گیا، جس کی وجہ سے ممکنہ طورپر ان لڑکوں نے برا محسوس کیا اور ہر چیز واپس کردی، صرف یہی نہیں بلکہ وہ جاتے ہوئے اس کے کندھے پر تھپکی بھی دیتے ہیں۔

جب اس بارے میں فوڈ پانڈا کے سی ای او نعمان سکندر مرزا سے رابطہ کیاگیا تو ان کا کہناتھاکہ رائیڈرز ضروری فرنٹ لائن ورکرزاور ہمارے ہیروز ہیں، ضروری کھانے اور دیگر اشیاء گھروں تک پہنچانے میں وہ ہرروز مشکلات کا سامنا کرتے ہیں تاکہ آپ لوگ گھر سے باہر نکلنے، اپنے اور اپنے خاندان کیلئے کورونا کے خطرے سے بچ سکیں، اس واقعے میں مجھے اطمینان ہوا کہ نعمان محفوظ ہے اور اس کی قیمتی اشیاء اسے واپس مل گئیں، لیکن میری حکام سے درخواست ہے کہ ہمارے محنتی ہیروز کی حفاظت کیلئے مزید اقدامات کیے جائیں۔ نعمان مرزا نے مزید بتایا کہ فوڈپانڈا پہلے ہی اپنے ڈیلیوری رائیڈرز کو روڈ سیفٹی، کورونا سے بچاؤ کی ٹریننگ، ہیلتھ انشورنس اور حادثاتی موت کو کوریج دیتا ہے، تمام رائیڈرز کیلئے انشورنس مفت ہے۔

مجرمانہ فعل میں اگر رائیڈر کو لوٹ لیاجاتاہے تو اسے اجازت ہے کہ رائیڈرز ٹکٹنگ پلیٹ فارم پر جائے جہاں اسے واقعے کی ایف آئی آر کی کاپی مہیا کرنا ہوگی، ایف آئی آر دینے کے بعد لوٹی گئی رقم رائیڈر کے کھاتے میں نہیں جائے گی اور رائیڈرزکو مالی نقصان سے بھی محفوظ رکھنے کیلئے تمام نقصان فوڈ پانڈا برداشت کرے گا۔ہررائیڈر چار سے پانچ کلومیٹر کے اندر کام کرتا ہے تاکہ ان کی فیول کی لاگت کو کم رکھاجاسکے، متعلقہ ڈیپارٹمنٹ رائیڈرز کی کمائی کا باریک بینی سے جائزہ لیتا ہے اور بلاتعطل بونس فراہم کیے جاتے ہیں۔کورونا وائرس کی وبا کے دوران جہاں کمپنیوں نے اپنے وسائل محدود کرلیے ہیں تاہم فوڈ پانڈا پاکستان کی ان چند کمپنیوں میں سے ایک تھا جس نے لاک ڈاؤن کی وجہ سے متاثر ہونیوالے علاقوں میں موجود رائیڈرز کی مالی معاونت اور راشن فراہم کیا۔

پاکستان کی لیڈنگ فوڈ ڈیلیوری کمپنی ہونے کے ناطے فوڈ پانڈا ملک بھر میں پندرہ ہزار سے زائد ورکرز کی سیکیورٹی اور حفاظت یقینی بناتا ہے،اب یہ بھی ایک اچھی مثال سامنے آئی ہے کہ پاکستانی ڈاکو بھی ان لوگوں کے لیے اچھے جذبات رکھتے ہیں جو ایمانداری سے اپنی روزی روٹی کمارہے ہیں۔ویڈیو دیکھئے 

مزید :

بزنس -جرم و انصاف -