مفتی عزیز الرحمان کے بعد ان کے دو بیٹے بھی گرفتار

مفتی عزیز الرحمان کے بعد ان کے دو بیٹے بھی گرفتار
مفتی عزیز الرحمان کے بعد ان کے دو بیٹے بھی گرفتار

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )لاہور کے مدرسے میں طالبعلم کے ساتھ بدفعلی کرنے والے مفتی عزیز الرحمان کو پولیس نے میاں والی سے گرفتار کر لیاہے تاہم اب ان کے دو بیٹوں کو بھی حراست میں لے لیا گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق مفتی عزیز الرحمان کے ایک بیٹے کو لکی مروت اور دوسرے کو کاہنہ سے حراست میں لیا گیاہے ، بیٹے عتیق الرحمان کو ایک مدرسے اور دوسرے بیٹے الطاف الرحمان کو لکی مروت سے حراست میں لیا گیاہے ، پولیس کا کہناہے کہ تحقیقات جاری ہیں جبکہ دیگر دو ملزمان لطیف الرحمان اور عبداللہ کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں ، انہیں جلد ہی گرفتار کر لیا جائے گا جس کے بعد چالان عدالت میں پیش کیا جائے گا ۔

یاد رہے کہ چند دن قبل سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہو ئی تھی جس میں مفتی عزیز الرحمان نوجوان طالبعلم کو اپنی حوس کا نشانہ بنا رہے تھے تاہم اب و ہ سلاخوں کے پیچھے ہیں ۔ کچھ روز پہلے لاہور کے مدرسے میں طالب علم سے زیادتی کی ویڈیو سامنے آنے پر مفتی عزیز الرحمٰن، ان کے بیٹوں اور نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

شعیب جانباز نے یہ بھی بتایا کہ مفتی عزیز کے بیٹوں پر مدعی صابر شاہ کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے کا الزام ہے.

مزید :

قومی -