دھاتی ڈورسے شہریوں کی ا موات حادثات نہیں قتل ہیں،تنویرخان

   دھاتی ڈورسے شہریوں کی ا موات حادثات نہیں قتل ہیں،تنویرخان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(پ ر)انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی سیکرٹری جنرل تنویراحمدخان نے کہا ہے کہ  شاہراہوں پردوران آمدورفت شہریوں سمیت معصوم بچوں کی دھاتی ڈورسے ہونیوالی ا موات کوئی حادثہ نہیں بلکہ انہیں قتل عمد تصورکیا اوراس میں ملوث شرپسند عناصر کوتختہ دارپرلٹکایاجائے۔پولیس اہلکاروں کی طرف سے ان عناصر کی گرفتاریاں مستحسن ہیں لیکن ابھی ریاست اورمعاشرت کی سطح پر مزید سنجیدہ اقدامات کی اشد ضرورت ہے۔ انسانوں کی زندگی سے کھیلنا ہرگز کوئی کھیل نہیں ہوسکتا۔دھاتی ڈوربنانے، بیچنے اوراستعمال کرنیوالے تینوں کردار قاتل اور قرار واقعی سزاکے مستحق ہیں۔ حالیہ برسوں کے دوران لاہور سمیت چند دوسرے شہروں کے مختلف مقامات میں دھاتی ڈورپھرنے سے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع سمیت معصو م بچوں کا ایڑیاں رگڑ رگڑ کاموت کی آغوش میں جاناقومی المیہ ہے۔

 اپنے ایک بیان میں تنویراحمدخان نے مزید کہا کہ تعجب ہے آئے روز اس قسم کے دلخراش واقعات رونماہونے کے باوجود کچھ بے ضمیر اوردرندہ صفت عناصر معصوم بچوں اوربیگناہ شہریوں کے گلے کاٹ رہے ہیں اوروہ شیطان دھاتی ڈور کا استعمال نہیں چھوڑتے۔جولوگ اپنے اڑوس پڑوس میں دھارتی ڈوراستعمال ہونے کے باوجودان کی بازپرس یا متعلقہ پولیس کواطلاع نہیں کرتے وہ بھی اخلاقی طورپرشریک جرم ہیں۔ انہوں نے  کہا کہ دھاتی ڈورکے ساتھ ساتھ پتنگ سازی اورپتنگ بازی پرمستقل پابندی کویقینی بنانے کیلئے سخت قانون سازی کی جائے ورنہ شہریوں سمیت معصوم بچوں کاقتل عام ہوتارہے گا۔دنیاکاکوئی مہذب معاشرہ اس قسم کی خونیں سرگرمیوں کامتحمل نہیں ہوسکتا۔انہوں نے کہا کہ جس معاشرے کے افرادایک دوسرے کے دکھ کواپنا دکھ سمجھنا اورآنسوپونچھناچھوڑدیں وہ معاشرے فناہوجاتے ہیں۔اگرعوام نے قاتل ڈورکیخلاف مزاحمت نہ کی توخدانخواستہ اس قسم کی اندوہناک سانحہ کسی کے ساتھ بھی پیش آسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہرکام پولیس پرنہیں چھوڑاجاسکتا، لوگ اپنے اپنے گلی محلے میں پتنگ سازوں،پتنگ فروشوں اورپتنگ بازوں کامحاسبہ کریں ورنہ روزقیامت ہم سب کٹہرے میں کھڑے ہوں گے۔