پی ٹی آئی کراچی کو بڑا دھچکا، فردوس  شمیم نقوی کے کاغذات مسترد

پی ٹی آئی کراچی کو بڑا دھچکا، فردوس  شمیم نقوی کے کاغذات مسترد

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی(این این آئی)بلدیاتی انتخابات سندھ کے دوسرے مرحلے کے انتخابات میں تحریک انصاف کو بڑا دھچکا لگ گیا۔تحریک انصاف کے رہنما و سابق اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی کے کاغذات نامزدگی مسترد ہو گئے۔فردوس شمیم نقوی نے کاغذات جمشید ٹاؤن میں جمع کرانے تھے لیکن انہوں نے جناح ٹاؤن میں کاغذات جمع کرادیئے۔تفصیلات کے مطابق سندھ میں بلدیاتی الیکشن کے دوسرے مرحلے پر 25 جولائی کو کراچی، حیدرآباد اور ٹھٹھہ میں پولنگ ہوگی، سیاسی و مذہبی جماعتوں کی جانب سے اپنے اپنے امیدواروں کو فائنل کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔پاکستان تحریک انصاف سندھ بھی الیکشن کے پہلے اور دوسرے مرحلے میں بھرپور طاقت کے ساتھ اپنے سیاسی حریفوں کا مقابلہ کرنے کے لئے امیدواروں کا چناؤ کررہی ہے۔اہم معرکہ کراچی کا ہوگا جس کے لئے پی ٹی آئی کی جانب سے میئر کراچی کیلئے چار امیدوار سامنے آگئے ہیں، ان میں پی ٹی آئی کراچی کے صدر بلال غفار، خرم شیرزمان، فردوس شمیم نقوی اور اشرف جبارقریشی شامل ہیں۔میئر کراچی امیدوار کے حتمی نام کا اعلان چیئرمین عمران خان کریں گے۔واضح رہے کہ سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں سکھر، لاڑکانہ، شہید بینظیر آباد، میرپورخاص ڈویژن میں 26 جون کو انتخابات ہونگے۔سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں 14 اضلاع سے کم از کم 946 امیدوار بلا مقابلہ منتخب ہو چکے ہیں، الیکشن کمیشن کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق کشمور کندھ کوٹ سے 96، قمبر شہدادکوٹ سے 70، جیکب آباد سے 135، شکارپور سے 94، لاڑکانہ سے 11، میرپور خاص سے 65 اور عمرکوٹ سے 65 امیدوار بلا مقابلہ منتخب ہوئے ہیں۔
کاغذات مسترد

مزید :

صفحہ آخر -