مہنگائی میں اضافہ کی وجہ سود ی قرضہ ہے، محمد حنیف طیب

مہنگائی میں اضافہ کی وجہ سود ی قرضہ ہے، محمد حنیف طیب

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 
سکھر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)چیئرمین نظام مصطفی پارٹی سابق وفاقی وزیرپیٹرولیم وقدرتی وسائل ڈاکٹرحاجی محمدحنیف طیب نے کہاکہ قائداعظم اورعلامہ اقبال کاپاکستان قدرتی حسن،سونا،کاپر،گیس اورپیٹرولیم منصوعات ودیگرمعدنیات سے مالامال ملک ہے۔بلوچستان میں معدنی وسائل سے پوری طرح استفاد ہ نہیں کیاجاسکا،بلوچستان کی سرزمین پاکستان کی تقدیراورقسمت بدل سکتی ہے حکمرانوں کی عیش وعشرت،کرپٹ اوربدعنوان بیوروکریسی، لوٹ مارکرنے والے سیاستدانوں نے کبھی پاکستان کو آگے نہیں بڑھنے دیاان خیالات اظہارانہوں نے گزشتہ روزسکھر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر نظام مصطفی پارٹی سندھ کے رہنمامولانانصیر احمدشیخ،سکھر کے کنوینرمولاناقاری عبدالحفیظ قادری ودیگر بھی موجودتھے۔حاجی حنیف طیب نے کہاکہ پاکستان کی ترقی میں موقع پرست سیاست، کرپٹ بیوروکریسی روکاٹ ہے،بدعنوانیاں کرنے والوں نے قدرتی وسائل پر کام ہی نہیں کرنے دیا۔معدنیات ودیگرقدرتی انعامات وسائل کے ثمرات عوام تک منتقل کرنے کیلئے باکردارایمان دار،ہمددردمحب وطن مخلص اورعوام کا احساس کرنے والی قیادت وحکومت ضروری اورلازمی ہے۔ حاجی حنیف طیب نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں جب تک نظام مصطفی نافذ نہیں ہوگا مسائل اور بحران ختم نہیں ہوسکتے۔ ہماری جدوجہد ملک کو اسلامی فلاحی پرامن اور معاشی طور پر مستحکم ریاست کے قیام کیلئے ہے۔نظام مصطفی پارٹی کے چیئر مین و سابق وفاقی وزیر حاجی حنیف طیب کا کہنا تھا کہ قائد اعظم محمد علی جناح سے قیام پاکستان کے فوری بعدہی بتادیا تھا کہ ملکی سرزمین گیس، سونا، تانبہ، پیٹرولیم مصنوعات، اور معدنیات موجود ہیں۔ملک کی کرپٹ،بے ایمان بیوروکریسی، سیاسی شخصیات کی وجہ سے نکلنے والی معدنیات سے آج تک استفادہ حاصل نہیں کرسکے ہیں۔ ہمارے حکمران قرض کے حصول کے لیے جاجاکر معاہدوں پر دستخط کرتے ہیں۔مہنگائی میں اضافہ کی وجہ سود ی قرضہ ہے،قرض لینگے کے لیے ہم انکی شرائط پر بجلی، گیس، پیٹرول، سمیت عام اشیا کے نرخوں میں اضافہ کرتے ہیں جس سے شہریوں کوشدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑھ رہا ہے۔ انہوں نے تنظیمی عہدیداران اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ بڑھتی ہوئی مہنگائی،بے روز گاری کی وجہ سے عام شہری براہ راست متاثرہ ہورہا ہے جس ایک وجہ سودی قرضہ لیکر ہم ڈالر میں ادائیگی کرتے ہیں جس سے روپے کی قدر میں تیزی سے کمی ہورہی ہے۔