فادر ڈے پرشہر شہر تقریبات، تحائف اور پھول پیش

    فادر ڈے پرشہر شہر تقریبات، تحائف اور پھول پیش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


خانیوال،وہاڑی،راجن پور(نمائندہ پاکستان،بیورو رپورٹ، نمائندہ خصوصی،تحصیل رپورٹر)فادر ڈے پر شہر شہر تقریبات منعقد کی گئیں، جس میں والد کو تقریبات کے دوران(بقیہ نمبر48صفحہ7پر)
 تحائف اور پھول پیش کئے گئے،دنیا میں والد سے بڑھ کرکوئی مہربان اور جانثار نہیں ہو سکتا۔ والد درخت مانند سایہ ہوتا ہے۔ والدین کی گستاخی کرنے والے خلاف مقدمہ درج کیا جاسکتا ہے۔ شفقت کا اعلی پیکر ہوتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار فادر ڈے کے حوالہ سے مختلف شخصیات سے سروے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔ ممبر قومی اسمبلی جعفرخان لغاری نے کہا کہ والد سے بڑھ کرکوئی شفیق نہیں ہو سکتا۔ ممبر صوبائی اسمبلی شازیہ عابد نے کہا کہ والد کا کوئی نیم البدل نہ ہے۔دنیا کی ہر ایک چیز مل جائے گی لیکن والد نہیں ملے گا۔ ممتاز قانون دان ملک اعجاز احمد راں ایڈوکیٹ نے کہا کہ والد درخت ہے جوخود دھوپ میں جل کرکے اولاد کو سایہ فراہم کرتا ہے۔ باپ اللہ تعالی کی نعمت ہے۔ بھوک پیاس اور بیماریاں اپنے لیے برداشت کرکے بچوں کے لیے اسانیاں اور خوشیاں لاتا ہے۔ قانون میں والدین کے گستاخ کے لیے تین سے پانچ سال تک سز ا ہے۔اور نان نقفہ ادا نہ کرنے پر کیس ڈگری ہونے کی صورت میں اولاد جیل جا سکتی ہے۔ ڈی ایس پی حافظ غلام فرید خان نے کہا کہ جس نے باپ کا دل دکھی کیا اس نے اللہ تعالی کے غضب کو دعوت دی۔دنیا میں والد کااحترام نہ کرنے والا بڑا بد نصیب ہے۔ قانون کے مطابق ا یسا کرنے والے خلاف مقدمہ درج کرکے پولیس جیل میں ڈال سکتی ہے۔ جماعت اہلسنت کے ڈویژن صدر پیر خواجہ قمرالدین شاہ جمالی نے کہا کہ اسلام اور قران مجید میں والدین کی عزت کا حکم دیا گیا۔ اف تک کے لفظ اس لیے بولے گئے ہیں۔ اپ کی تعلیمات کا مطالعہ کرکے کامیاب زندگی گزاری جا سکتی ہے۔ ممتاذ مائر تعلیم وڈپٹی ڈی ای او ڈاکٹر امجد اسلام پتافی نے کہا والد شفقت کا پیکر ہوتا ہے۔اولاد کے لیے بہت سی تکلیف برداشت کرکے ان کی ٹھنڈی چھاوں کا احتمام کرتا ہے۔غازی میڈیکل کالج کے پروفیسر ڈاکٹر مختیا ر احمد احمدانی نے کہا والد زندگی کا سرمایہ ہے۔ چھوٹی عمر کا ایک احسان بھی نہیں چکایا جا سکتا۔ سماجی رہنما ملک خلیل احمد ڈھول نے کہا ہمیں اپنے والدین کو ادب کرنا چائے۔۔   دنیا بھرکی طرح وہاڑی میں بھی  فادر ڈے  پورے جوش و جذبہ سے منایا گیا بچوں نے اپنے والد کو تحائف پیش کئے اور ان کی لمبی عمر کی دعائیں کیں۔ فادرڈیکے موقع پر جن بچوں کے باپ سلامت ہیں انہوں نے  اپنے باپ کے ساتھ سوشل میڈیا پر سیلفیاں بنا کر لگائیں اور جن کے وفات پا گئے تھے ان کی مغفرت کے لیے دعائیں آپ لوڈکیں۔ فادرز ڈے کو مدرڈے (ماؤں کا عالمی دن) بھرپور انداز میں منائے جانے کے بعد شروع ہوا تھا۔ امریکی صدر جانس نے 1966 میں جون کے تیسرے اتوار کو فادرز ڈے قرار دیا تب سے یہ ہر سال باقاعدگی سے منایا جارہا ہے فادر ڈے منانے کیلئے سوشل میڈیا  کا بھی بھرپور استعمال ہوا۔دنیا بھرکی طرح خانیوال میں بھی گزشتہ روز فادر ڈے پورے جوش و جذبہ سے منایا گیا بچوں نے اپنے والد کو تحائف پیش کئے اور ان کی لمبی عمر کی دعائیں کیں۔ فادرڈکے موقع پر جن بچوں کے باپ سلامت ہیں انہوں نے اپنے باپ کیساتھ سوشل میڈیا پر سیلفیاں بنا کر لگائیں اور جن کے وفات پا گئے تھے ان کی مغفرت کے لیے دعائیں آپ لوڈکیں۔ فادرز ڈے کو مدرڈے (ماؤں کا عالمی دن) بھرپور انداز میں منائے جانے کے بعد شروع ہوا تھا۔ امریکی صدر جانس نے 1966ء میں جون کے تیسرے اتوار کو فادرز ڈے قرار دیا تب سے یہ ہر سال باقاعدگی سے منایا جارہا ہے فادر ڈے منانے کیلئے سوشل میڈیا کا بھی بھرپور استعمال ہوا۔