تونسہ میں سوشل میڈیاپرخطر ناک ہتھیاروں کی نمائش

  تونسہ میں سوشل میڈیاپرخطر ناک ہتھیاروں کی نمائش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


تونسہ شریف(نمائندہ پاکستان)تونسہ میں سوشل میڈیا پر تواتر سے اسلحہ کی نمائش و فروخت کا سلسلہ جاری ہے۔اسلحہ ڈیلروں نے چھوٹے معصوم بچوں کو گھنانے فعل میں استعمال کرنا شروع کر دیا،شہریوں میں خوف کی لہر تفصیلات کے مطابق کچھ عرصہ سے تونسہ میں اسلحہ ڈیلرز سوشل میڈیا پر سرعام خطرناک ہتھیاروں کی نمائش کر رہے ہیں اور سوشل میڈیا پر ہی بولیاں ا(بقیہ نمبر24صفحہ6پر)
ور بھا تا کر رہے ہیں اسلحہ چیک کرانے کیلیے اکثروبیشتر فائرنگ کی ویڈیوز بنا کے بھی اپلوڈ کر دیتے ہیں پسند کیا گیا ہتھیار خریداروں کو انکی بتائی گئی جگہوں پر پہنچانے کی سہولت بھی فراہم کی جاتی ہے یہاں یہ امر انتہائی افسوسناک ہے کہ اس گھنانے کام کی نمائش میں اب اپنے چھوٹے معصوم بچوں کو بھی استعمال کر رہے ہیں تصاویر دیکھ کر گماں ہوتا ہے کہ یہ حقیقت نہیں بلکہ کسی فلم یا ڈارمے کا کوئی ٹریلر چل رہا ہے حیرت اور دکھ کی بات ہے کہ ایسے عناصر ابھی تک قانون کی گرفت سے باہر ہیں اور دیکھتے دیکھتے تونسہ اسلحہ کی ایک بہت بڑی منڈی کے طور پر شہرت پا چکا ہے سماجی حلقوں نے تونسہ کے حالات پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہر کی موجودہ صورتحال سے یہ تاثر ملتا ہے کہ تونسہ کے شہری پتھروں اور غاروں کے دور میں واپس چلے گئے ہیں جہاں کوئی ادارہ قانون یا انصاف نہیں ہے بلکہ جس کی لاٹھی اسکی بھینس کے مصداق لوگ زندگی گزار رہے ہیں شہریوں علی رحمن خان حمزہ خان ابراہیم خان احمد شیراز خان و دیگر نے میڈیا سے گفتگو کے دوران ان حالات پر انتہائی تشویش کا اظہار کیا کہ جرائم پیشہ عناصر اپنی نسلِ نو کی تربیت بچپن سے اسلحہ اور منشیات کے ماحول میں کر رہے ہیں ایسے بچوں کا مستقبل کیا ہوگا اسی نسل نے پاکستان کا مستقبل بننا ہے اور معاشرے کی تعمیر کرنی ہے،اداروں کی غفلت سے پاکستان بالخصوص تونسہ کا مستقبل تباہی کے دہانے پہ پہنچ چکا ہے سماجی حلقوں نے آر پی او ڈیرہ غازیخان ڈی پی او ڈیرہ غازیخان آئی ایس آئی افسران اور دیگر سیکورٹی اداروں سے خصوصی طور پر تونسہ کے حالات پر فوکس اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف بے رحم اپریشن کا مطالبہ کیا ہے۔