جنوبی پنجاب، طوفانی بارش، پانچ جا ں بحق، بجلی، مواصلات کا نظام تباہ

      جنوبی پنجاب، طوفانی بارش، پانچ جا ں بحق، بجلی، مواصلات کا نظام تباہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

      ملتان،ڈیرہ،کوٹ ادو،، بہاولپور،دوکوٹہ،میلسی (وقائع نگار، نیوزرپورٹر، بیورورپورٹ،تحصیل رپورٹر،سٹی رپورٹر،ڈسٹرکٹ بیورو، نمائندہ پاکستان،نامہ نگار)وہوا اور نواحی قصبات میں قیامت خیز طوفان بادو باراں نے تباہی مچادی،ایک شخص جاں بحق کئی مویشی اور پرندے (بقیہ نمبر14صفحہ6پر)
ہلاک، وہوا سٹی فیڈر اور اولڈ وہوا فیڈر کے ایک سو سے زائد بجلی کے پول گرگئے، درجنوں ٹرانسفارمر کئی میٹر دور جاگرے، بجلی اور مواصلات کا نظام تباہ، مکانات و دکانوں کی دیواریں، چھتیں،سائن بورڈ، زرعی زمینوں کے ٹیوب ویلز اور گھر کی چھتوں پر رکھی سینکڑوں پلیٹیں تیز ہوا اڑا لے گئی،درجنوں مویشی لاپتہ، بجلی کا کئی گھنٹوں سے طویل بریک ڈان، نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا، تفصیل کے مطابق گذشتہ شب وہوا اور نواحی قصبات جن میں مٹھوان، لتڑا، درکانی، صابو خیل، ظہور آباد، بستی درولی، شاہ جھوک، جھوک بودو، باطلہ، روڈہ ٹبہ، ڈگر والی، کوتانی، جلووالی، کوہر، مندھریں سمیت درجنوں دیہات شامل ہیں میں شدید بارش اور طوفانی ہوائیں چلیں جس سے ہر طرف جل تھل ہوگیا گلی محلوں میں ہر طرف پانی جمع ہوجانے کے باعث راستے مسدود ہوکر رہ گئے 70 کلومیٹر فی گھنٹہ سے زائد کی رفتار سے آنے والی تیز آندھی نے قیامت برپا کردی جس سے درجنوں مکانات کی دیواریں گر گئیں دیوار منہدم ہونے سے ایک شخص امان اللہ ولد فیض اللہ جاں بحق ہوگیا جبکہ کئی افراد زخمی ہوگئے کئی تناور درخت جڑوں سے اکھڑ گئے جس سے سینکڑوں پرندے اور مویشی ہلاک ہوگئے دکانوں اور زرعی ٹیوب ویلز پر لگائی گئی سینکڑوں سولر پلیٹیں اڑ کر کئی میٹر دور جاگریں اور ٹوٹ گئیں جس سے شہریوں کو لاکھوں روپے کا نقصان ہوا ہے طوفان بادو باراں کے باعث چراہ گاہوں میں موجود درجنوں مویشی بھی ہلاک اور لاپتہ ہوگئے گرڈاسٹیشن نوراحمد والی سے وہوا سٹی فیڈر اور اولڈ وہوا فیڈر کے 100 سے زائد پول زمین بوس ہوگئے جس سے بجلی اور مواصلاتی نظام مکمل تباہی ہوگیا ہے اور علاقہ بھر میں کئی گھنٹوں سے بجلی کی سپلائی معطل ہونے سے شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے شدید بارش کے باعث فصلات اور مویشیوں کے لیے کاشتہ چارہ جات کو بھی شدید نقصان پہنچا فصلات کے تباہ ہوجانے سے زمینداروں اور کسانوں کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے جبکہ چارہ تباہ ہوجانے سے آئندہ سیزن میں مویشیوں کے کھانے کے لیے چارہ کی قلت پیدا ہونے کا اندیشہ پیدا ہوگیا ہے۔دریں اثناء کوٹ ادو وگردونواح میں تیز بارش،مسلسل موسلادھار بارش سے کوٹ ادو شہر جل تھل ہوگیا اور شہر کی گلیاں، سڑکیں اور نشیبی علاقے بارشی پانی سے بھرگئے،بارش کی وجہ سے گرمی کازورٹوٹ گیا اورموسم نہایت خوشگوار ہوگیا،موسلادھار بارش آنے پر شہر میں نکاسی آب سسٹم جواب دے گیا اور کئی گھنٹے تک ڈسپوزل چالو نہیں کیے گئے جس سے بارشی پانی ساراد ن سڑکوں اورگلیوں میں جمع رہا اور شہریوں کو آمدورفت میں شدید مشکلات کاسامنا کرناپڑا جبکہ اکثر شہریوں اور راہگیروں کو متبادل راستے اختیارکرناپڑے، دوسری طرف موسلادھار بارش سے بجلی وٹیلی فون کا نظام معطل ہوگیا اور شہر کے تمام فیڈر کئی گھنٹے تک بند رہے،بارش کے بعدموسم کو انجوائے کرنے کیلئے شہر کی اکثر فیملیوں نے پکنک منانے کیلئے تونسہ بیراج کارخ کیاجہاں شہریوں کا رش ہونے پر,,جنگل میں منگل،،کاسماں تھا۔علاوہ ازیں تیز طوفان و آندھی کے باعث مکان کی چھت گرنے اور تالاب میں نہاتے ہوئے ایک بچے سمیت دو افراد جاں بحق ایک زخمی ہوا۔ٹبی قیصرانی کے مقام پر تیز بارش کے باعث ایک گھر کی دیوار گر گئی جس کے ملبہ کے نیچے آکر ایک 58سالہ بزرگ عبدالمجید ولد حیدر خان زخمی ہوگیا ریسکیو اہلکاروں نے واقع کی اطلاع ملنے پر جائے حادثہ پر پہنچ کر زخمی کوطبی امداد فراہم کرنے کے بعد آر ایچ سی تونسہ منتقل کردیا اسی طرح تونسہ کے ہی علاقہ میں ایک اور گھر کی چھت جوکہ کانوں اور لکڑیوں سے بنی ہوئی تھی تیز بازش کے بعد اچانک گر گئی جس کے ملبہ کے نیچے دب کر ایک 34سالہ امان اللہ ولد فیض محمد زخمی ہوگیا جیسے ریسکیو اہلکار ہسپتال لے کر جارہے تھے کہ وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستے میں ہی جا ں بحق ہوگیا نعش کو ریسکیو اہلکاروں نے تونسہ ہسپتال منتقل کردیاجبکہ بارتھی کے مقام پر ایک سات سالہ بچہ فضل احمد ولد محمد رمضان بارش سے بنے ہوئے تالاب میں نہاتے ہوئے ڈوب کرجاں بحق ہوگیاریسکیو اہلکاروں نے نعش ٹی ایچ کیو تونسہ شریف منتقل کردی۔علاوہ ازیں گذشتہ روز الصبح بہاولپورمیں موسلادھاربارش ہوئی جس سے جل تھل ہوگئی۔ بارش کے فوری بعد پورے شہرمیں اکثرعلاقے بجلی سے محروم ہوگئے اور ان علاقوں میں کئی گھنٹوں کے بعد بجلی بحال ہوئی موسلادھاربارش کے بعد سرکلرروڈ ریلوے روڈ جیل روڈ‘ لاری اڈہ‘بی وی ایچ‘ماڈل ٹاؤن اے بی سی‘شاہدرہ‘سیٹ لائٹ ٹاؤن کی سڑکیں پانی میں ڈوب ہوگئی اور یہ سڑکیں دریاکامنظرپیش کرنے لگی کارپوریشن کاعملہ بارش کے فوری بعد سڑکوں سے پانی نکالنے میں مصروف رہے۔ دریں اثناء مون سون کی پہلی بارش کے بعد جہاں پر فصلوں پر مثبت اثرات مرتب ہوئے ہیں اور لوگ خوشی سے جھوم اٹھے ہیں وہاں پر دوکوٹہ اور گردونواح کے متعدد علاقوں جن میں کوٹ ملک دوکوٹہ  بستی عباس نگر موضع گھلو چک نمبر 145 سمیت دیگر جگہوں پر سیوریج کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے اکثر گلیاں تالاب کا منظر پیش کر رہی ہیں جگہ جگہ پانی کھڑا ہونے کے باعث شہریوں کو گزرنے کے لیے شدید مشکلات کا سامنا ہے کوٹ ملک دوکوٹہ میں حال ہی میں بچھائی گئی سیویج لائن بارش کی وجہ سے بیٹھ گئی ہے جس سے وہاں پر آمدورفت کا سلسلہ بند ہوچکا ہے اور یہ بھی خدشہ ہے کہ کروڑوں کی لاگت سے تعمیر ہونے والی یہ سیوریج لائن ٹھیکیدار کی نااہلی کے باعث پہلی ہی بارش میں ختم ہو جائے اسی طرح عباس نگر میں مین رابطہ سڑک تالاب کا منظر پیش کر رہی ہے۔علاوہ ازیں تحصیل بھر میں بارش کے بعد مزدوروں کے گھروں میں بارش نے قیامت مچا دی۔مختلف مواضعات میں کچے گھر جو نشیب میں تھے میں بارش کا پانی جمع ہو گیا جس کو نکالتے دن گذر گیا اور ہزاروں مزدور کام پر نہ جاسکے۔ جس سے مالی نقصان ہو گیا کء گھروں کی کچی دیواریں گرنے کی اطلاعات ملی ہیں۔دوسری طرف بارش کی شدت کی بنا پر میلسی کے سب سے بڑے قبرستان نتھے شاہ میں قبروں کے نشانات مٹ گئے۔لوگ اپنے پیاروں کی قبروں کی نشانات کا تعین. کر کے ان کے "تعویذ"بناتے رہے دوسرے روز بھی وقفے وقفے سے   بارش ہو تی رہی قمبر روڈ میلسی کی آبادی میں وولٹیجز کی کمی بیشی سے برقی اطلاعات جلنے کی اطلاع ہے۔کاروبار زندگی معطل رہاشہر میں  بہت کم دوکانیں کھل سکیں۔اندرون شہر گھروں سے پانی نکال لیاگیا تاہم اتوار کو  دوسری بارش نے پہلے سے کم مگر نکاسی کے مسائل پیدا کیے۔دریں اثناء کرنٹ لگنے کے مختلف واقعات میں نوجوان سمیت دوافرادجاں بحق ہوگئے۔ملتان میں ہونے والی موسلادھار بارشوں کی وجہ سے گلی محلوں اوردیواروں میں کرنٹ آگیاتھامخدوم رشید کے علاقے چاک11ایم آر پرانا دنیا پور روڑ 19سالہ محمد گھاس کاٹنے والے ٹوکہ مشین پر کام کررہا تھا کہ اچانک کرنٹ لگنے سے وجہ سے بے ہوش ہوگیا جو موقع پر ہی خالق حقیقی سے جاملاجبکہ تھانہ شاہ رکن عالم کے علاقے انصار کالونی کارہائشی 74سالہ معمر شخص  الیاس گھر جارہاتھاکہ ایچ بلاک شاہ رکن عالم کالونی میں لگے ہوئے بجلی کے کھمبے میں کرنٹ ہونے کی وجہ سے ہاتھ لگنے سے شدید جھٹکا لگا۔جو موقع پر ہی سیاہ ہوگیااورموت واقعی ہوگئی واقعات کی اطلاعات پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر کارروائی مکمل کرنے کے بعد نعشیں ورثاکے حوالے کردی۔علاوہ ازیں ملتان الیکٹرک پاورکمپنی(میپکو)ریجن میں مسلسل دوسری رات طوفان بادوباراں سے بجلی کا نظام متاثرہوا۔ہفتہ اور اتوارکی درمیانی شب شدید آندھی اور مسلسل کئی گھنٹے تک جاری رہنے والی تیزآندھی اور بارش سے میپکو ریجن کے زیر انتظام ملتان، وہاڑی، مظفرگڑھ، ڈی جی خان، ساہیوال اور دیگر آپریشن سرکلوں کے علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثرہوئی اور کئی مقامات پر ٹرانسفارمرز، ہائی ٹینشن اور لوٹینشن پولز اور لائنز زمین بوس ہوگئیں۔ چیف ایگزیکٹو آفیسر میپکو انجینئر مہر اللہ یار بھروانہ نے میپکو ریجن کے تمام آپریشنل افسران کو بارش رکنے کے بعد بجلی بحالی کا کام شروع کرنے کی ہدایت کی۔چیف انجینئر او اینڈ ایم ڈسٹری بیوشن رانا محمد ایوب خان بجلی بحالی کے کاموں کی نگرانی کے لئے پاور کنٹرول سنٹر میں موجود رہے۔اتوار کی شب اور صبح بارش رکنے کے بعد میپکو کے آپریشنل افسران کی نگرانی میں لائن سٹاف نے بجلی بحالی کا سلسلہ شروع کیا اور پٹرولنگ کرکے بیشتر متاثرہ فیڈرز کی بجلی صبح تک بحال کردی جبکہ پولز اور لائنز گرنے والے مقامات پر نئی تنصیبات نصب کرکے بجلی بحالی کا کام گزشتہ شام تک جاری رہا۔