تیار ی کر لیں 10جولائی سے پہلے احتجاج کی کال دے سکتا ہوں: عمران خان 

  تیار ی کر لیں 10جولائی سے پہلے احتجاج کی کال دے سکتا ہوں: عمران خان 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) پاکستان تحریک انصاف نے اتوار کی رات9سے 10بجے تک لاہور پشاور، اسلام آباد، کراچی، فیصل آباد سمیت ملک کے متعدد شہروں میں  پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے اورمہنگائی کیخلاف احتجاج کیا،احتجاج کی کال پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے دی تھی، عمران خان نے  ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا،اپنے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ موجودہ امپورٹڈ حکمران ملک پر مسلط رہے تو ادارے تباہ ہو جائیں گے۔ان کا مقصد صرف این آر او لینا ہے فٹیٹف کیلئے جب قانون سازی ہورہی تھی ان لوگوں نے اس کا بائیکاٹ کیا میرے خلاف8مقدمات درج ہو چکے ہیں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت رجیم چینج سازش کا حصہ بنی، سازش تھی یا مداخلت اس کی تحقیقات ہونی چاہیے اور ڈی جی آئی ایس پی آر یہ طے نہیں کر سکتے کہ سازش نہیں تھی۔ سوشل میڈیا انفلوئنسرز سے خطاب کے دوران انہوں ں ے کہا کہ میں اس ملک کا وزیراعظم تھا میرے سامنے تحقیقات نہیں آئیں، جو اس سازش میں ملوث ہے وہ چاہتے ہیں خفیہ پیغام کو دبا دیا جائے، عدم اعتماد کے پیچھے مہنگائی کا جھوٹا بیانیہ بنایا گیا۔انہوں نے کہا کہ اگر آپ حکومت نہیں سنبھال سکتے تھے تو کیوں سازش کی؟ عوام اس وقت مہنگائی کے باعث غصے سے بھرے بیٹھے ہیں، روپے کی قدر میں کمی یا پیٹرول کی قیمت بڑھی تھی تو یہ مہنگائی مارچ لے کر پہنچ جاتے تھے، اب خود عوام پر مہنگائی کے بم پھینک رہے ہیں۔’ان کی اپنی حکومت میں قومی سلامتی کمیٹی نے ہمارا مؤقف تسلیم کیا‘چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ان کی اپنی حکومت میں قومی سلامتی کمیٹی نے ہمارا موقف تسلیم کیا، بد قسمتی سے پاکستان کے نامور ڈاکووں کو ملک پر مسلط کر دیا گیا، نیب میں ترامیم سے ایک ایک ڈاکو کو این آر او ملے گا، ان کے کیسز کی تحقیقات کرنے والے لوگ مر رہے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ کوئی ہارٹ اٹیک سے مر رہا ہے کوئی خودکشی کر رہا ہے، مشتاق چینی والا رہ گیا اس کا اگلا نمبر ہے، پاکستان کو اصل مسئلہ ڈالرز کی کمی کا ہیاور اس وقت ملک میں 30 فیصد مہنگائی ہو چکی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ بلاول نے مارچ مہنگائی کے نام پر کیا اور وہاں سے نکلا کانپیں ٹانگتی ہیں، 25 مئی کو جس طرح پولیس نے تشدد کیا اس کی مثال نہیں ملتی، جیسی شیلنگ یہاں کی گئی وہ سارا منظر نامہ مقبوضہ کشمیر جیسا تھا، رائیٹ ٹو پروٹیسٹ اور رائیٹ ٹو موومنٹ کو کوئی نہیں روک سکتا۔سابق وزیرا عظم نے کہا کہ سی سی پی او لاہور اور آئی جی اسلام آباد کو خاص ہدایت تھی کہ ظلم کرنا ہے، تیاری کر لیں 10 جولائی سے پہلے کال دے سکتا ہوں۔ اس سے قبل چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی زیرصدارت سیاسی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں ملکی مجموعی سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق تحریک انصاف سندھ کے صدر علی حیدر زیدی کی جانب سے این اے 240 میں ضمنی انتخاب کے حوالے سے مفصل رپورٹ پیش کی گئی تحریک انصاف کی سیاسی کمیٹی کی جانب سے این اے 240 کے ضمنی انتخاب کو مکمل طور پر کالعدم قرار دینے کی سفارش کی گئی۔چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے الیکشن کمیشن سے این اے 240 کا انتخاب کالعدم قرار دینے کا مطالبہ کیا ۔ عمران خان نے کہاکہ این اے 240 میں صاف و شفاف انتخاب کے انعقاد کے حوالے سے الیکشن کمیشن کی کارکردگی مایوس کن ہے۔عمران خان نے کہاکہ محض 8 فیصد لوگوں کی ووٹنگ میں شمولیت بڑے پیمانے پر عوام کے انتخابی عمل سے لاتعلقی کا اظہار ہے۔ سابق وزیر اعظم نے کہاکہ الیکشن کمیشن کی جانب سے تشدد اور دھاندلی کی غیر معمولی اطلاعات کے باوجود انتخاب کو کالعدم قرار نہ دینے کا فیصلہ باعث تعجب ہے سابق وزیراعظم عمران خان نے رکن سندھ اسمبلی شبیر قریشی کی گرفتاری پر اپنے تحفظات کا اظہار کردیا۔ عمران خان نے علی زیدی اور عمران اسماعیل سے ٹیلی فونک رابطہ کر کے رکنِ صوبائی اسمبلی شبیر قریشی کی گرفتاری کے حوالے سے تفصیلات معلوم کیں۔پی ٹی آئی اعلامیے کے مطابق عمران خان نے سندھ میں پولیس گردی کی مذمت کی۔

عمران خان

مزید :

صفحہ اول -