این اے 113ڈسکہ امیدواروں کے ہور ڈنگز سائن بورڈزاور بینرآویزاں ،سیاسی گہما گہمی میں اضافہ

این اے 113ڈسکہ امیدواروں کے ہور ڈنگز سائن بورڈزاور بینرآویزاں ،سیاسی گہما ...
این اے 113ڈسکہ امیدواروں کے ہور ڈنگز سائن بورڈزاور بینرآویزاں ،سیاسی گہما گہمی میں اضافہ

  


لاہور(شہباز اکمل جندران/معاونت رانا محمد شبیر ، زاہد محمود گورائیہ ) قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 113میں سیاسی بخار کا ٹمپریچر بڑھنے لگا۔شہر میں جگہ جگہ سیاستدانوں اور متوقع امیدواروں کے ہورڈنگز ، سائن بورڈز اور بینر آویزاں ہوگئے۔ سیاست اور الیکشن عوام کا پسندیدہ موضوع بن گئے۔سےالکوٹ قومی اسمبلی کا حلقہ این اے 113 ضلع سےالکوٹ کی تحصےل ڈسکہ اور اسکے گردونواح پر مشتمل ہے اس حلقے کے نےچے حلقہ پی پی130اور پی پی 128آتاہے سر زمےن ڈسکہ نے بڑے بڑے سےاست دان پےدا کئے ہےں جنہوں نے سیاست کے میدان میں اپنا خوب لوہا منواےا ہے ڈسکہ ایک صنعتی شہر ہے اور بنیادی طور پر پاکستان مسلم لیگ ن کا گڑھ سمجھا جاتا ہے الیکشن2008میںحلقہ این اے 113میں پاکستان مسلم لیگ ن کے ایم این اے سید مرتضی امین نے بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی جبکہ ان کے مدمقابل ق لیگ کے علی اسجد ملہی دوسرے ،پاکستان پیپلز پارٹی کے ڈاکٹر ظہیر الحسن رضوی تیسرے نمبر پر رہے اورحلقہ پی پی 130میں چودھری یحییٰ گلنواز گھمن ایڈووکیٹ پہلے ،ق لیگ کے سابق ایم پی اے چودھری ممتاز علی دوسرے اور پاکستان پیپلز پارٹی کے قاری ذوالفقار علی سیالوی تیسرے نمبر پر رہے ۔ اسمبلےاں تحلےل ہونے کے بعد الیکشن 2013کی تیاریاں زورو شور سے جا ری ہیں اور کئی نئے چہرے میدان میں آنے کے لیئے پر تول رہے ہیں جن امیدواروں نے پارٹی الیکشن کے لےے ٹکٹ حاصل کر نے کے لیئے کاغذات جمع کروائے ہیںحلقہ این اے 113 میں پاکستان مسلم لیگ ن کے ایم این اے صاحبزادہ مرتضی امین ،سابق وفاقی پارلیمانی سیکرٹری سید افتخار الحسن ظاہرے شاہ ،سابق ایم پی اے چوہدری محمد جمیل اشر ف ،سابق صوبائی وزیر چودھری ارمغان سبحانی ،پیپلز پارٹی کی طرف سے ڈاکٹر ظہیرالحسن رضوی ،سابق تحصیل ناظم چودھری اعجاز احمد چیمہ ،ق لیگ کی جانب سے سابق ایم اے علی اسجد ملہی ،سابق صوبائی پارلیمانی سیکرٹری چوہدری صداقت علی،تحریک انصاف کی طرف سے رﺅف احمد باجوہ ،مرزا عبد القیوم ،چودھری کرنل سلطان سکندر گھمن،چودھری غلام مصطفے گجر اور پی پی 130 میں ن لیگ کے ایم پی اے چودھری یحیی گلنواز گھمن ایڈووکیٹ،سابق ایم پی اے محمد اشفاق وائیں بھولی بٹ،توحید اقبال بٹ ،فواد غنی چیمہ ،مرزا شاہد صدیق،ملک جمیل اخترایڈووکیٹ ،محمد آصف باجوہ ایڈووکیٹ، ق لیگ کی جانب سے سابق ایم پی اے چودھری ممتاز علی ،ضیاءاللہ کھارا،چودھری صداقت علی پیپلز پارٹی کی جانب سے قاری ذوالفقار علی سیالوی ،خواجہ عاطف رضا پاشی ،تحریک انصاف کی جانب سے سابق تحصیل ناظم ناصر محمود چیمہ ،محمد آصف خاں شیروانی المعروف چاند خان ،ڈاکٹر رضا ساہی،حاجی ضرار خان،محمد افضل منشائ، اور جماعت اسلامی کی جانب سے عابد مغل ایڈووکیٹ کے نام سامنے آرہے ہیں جبکہ پی پی 128سے مسلم لےگ ق کے باﺅ رضوان، پاکستان مسلم لےگ ن کے ظاہرے شاہ سمےت دےگر کئی اےک نے اپلائی کر رکھا ہے حاجی احسان اللہ، محمد آصف ، رانا افضل بھی اس حلقے سے امےدوار صوبائی اسمبلی ہےں۔ پاکستان مسلم لیگ ن کی پارٹی پالیسی کہ کامیاب امیدوار ہی آئندہ الیکشن میں امیدوار ہوں گے لیکن پارٹی کے سرکردہ رہنماﺅں کے درمیان سرد جنگ اور ایم پی اے چودھری یحیی گلنواز گھمن کی حلقہ میں مقبولیت میں کمی کی وجہ سے ان کی مخالفت دیکھنے میں آرہی ہے پیپلز پارٹی اور ق لیگ کے اتحاد کی صورت میں این اے 113میں ق لیگ اور پی پی130میں پیپلز پارٹی کا امیدوار مشترکہ ہو گا ڈسکہ مسلم لیگ ن کا گڑھ سمجھا جاتا ہے لیکن عرصہ داراز سے سیوریج کا نظام درہم برہم ہو نے کی وجہ سے شہر میں لیگی امیدواروں کی مخالفت دیکھنے میں آرہی ہے جبکہ حلقہ میں سابق ایم این اے سید افتخار الحسن ظاہرے شاہ نے ترقیاتی کاموں کا جال بچھا دیا ہے تاہم سابق اےم پی اے چوہدری محمد جمےل اشرف بھی اعلیٰ خداداد صلاحےتوں کے مالک اور خدمت خلق کے جذبہ سے سر شار محب وطن لےڈر ہےں انہوں نے بھی علاقہ کی تعمےر وترقی کےلئے کافی بھاگ دوڑ کی ہے الیکشن کے تاریخ کے اعلان کے بعد معلوم ہوگا کہ پارٹی کی ٹکٹ کس خوش نصیب افراد کو ملتی ہے اور کامیانی کا سہر کس کے سر سجتا ہے یہ تو الیکشن کے بعد بھی معلوم ہو گا۔ سےالکوٹ کے حلقہ پی پی 123 سے مسلم لےگ ن کی سےٹ خالی ہوگئی ہے کےونکہ اس سےٹ پر گزشتہ الےکشن مےں کامےاب ہونے والے امےدوار انجےنئر عمران اشرف نے تحرےک انصاف مےں شمولےت احتےار کر لی ہے اس سےٹ کےلئے اب صدر رےجن کرکٹ اےسوسی اےشن سےالکوٹ ، ڈائرےکٹر ملک سپورٹس و رہنما پاکستان مسلم لےگ ن ملک محمد ذوالفقار نے ٹکٹ کےلئے کاغذات جمع کروادئے ہےں ملک محمد ذوالفقار اور انکی فیملی باپ دادا سے پکے سچے مسلم لےگی ہےں مےاں محمد نواز شرےف کو اپنا نجات دہندہ لےڈر مانتے ہےں انکے والد محترم بھی متعدد بار کارپورےشن کونسلر رہ چکے ہےں جبکہ انکے بھائی نے دور آمرےت مےں بھی مسلم لےگ ن کے پلےٹ فارم سے سےالکوٹ تحصےل ناظم کا الےکشن لڑا تھا اور پوری جرات مندی سے تمام مخالفتوں کا سامنا کےا تھا اب بھی انکے بھائی مسلم لےگ ن کے پلےٹ فارم سے ضلع چئےرمےن بےت المال کے عہدہ پرفائز ہےں ملک محمد ذوالفقار کا کہنا ہے کہ اللہ کے فضل وکرم سے پاکستان مسلم لےگ ن کے قائد مےاں محمد نواز شرےف ، وزےر اعلیٰ پنجاب مےاں شہباز شرےف کے جھنڈے تلے اور اےم اےن خواجہ محمد آصف کی زےر قےادت خدمت خلق کے مشن کو عبادت سمجھ کر جاری رکھے ہوئے ہےں اگر پارٹی اور عوام نے خدمت کا مزےد موقع عطاءکےا تو انشاءا للہ اس سلسلہ مےں کوئی کسر اٹھا نہ رکھے گے۔پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے این اے 113 اور پی پی 130 سے چودھری عنصر علی آف گاگہ جبکہ پی پی 130 سے ہی پی ٹی آئی کی ٹکٹ کے خواہش مند رانا غلام مصطفی بھی ہیں۔ ان دونوں کو علاقہ کے بااثر گروپوں اور ممتاز شخصیات و برادریوں کی حمایت بھی حاصل ہے۔ چودھری عنصر علی قبل ازیں وائس چیئرمین بلدیہ ڈسکہ اور دو مرتبہ سٹی نائب ناظم بھی رہ چکے ہیں۔ جبکہ رانا غلام مصطفی انجمن شہریان ڈسکہ کے صدر بھی ہیں۔ وہ شہر کے معروف نیوز ایجنٹ بھی ہیں۔ پی پی 130 سے عمار گیلانی اور چودھری وقاص بلال بھی تحریک انصاف کے ٹکٹ کے لئے کوشاں ہیں۔ عمار گیلانی انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن کے تحصیل صدر اور چودھری وقاص بلال معروف سماجی کارکن ہیں۔

الیکشن این اے 113

مزید : الیکشن ۲۰۱۳