پاکستان عیسائیوں کی عزت نہیں کرتا ،امداد بند کردیں : امریکی کانگریس

پاکستان عیسائیوں کی عزت نہیں کرتا ،امداد بند کردیں : امریکی کانگریس
پاکستان عیسائیوں کی عزت نہیں کرتا ،امداد بند کردیں : امریکی کانگریس

  


واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی کانگریس نے اوباما انتظامیہ سے کہا ہے کہ وہ امریکہ میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے درکار فنڈز کی وجہ سے پاکستان کی امداد میں کٹوتی کرے۔امریکی کانگریس میں ریپبلکن پارٹی کے رکن ٹیڈ پو نے خطاب کرتے ہوئے پاکستان پر الزام عائد کیا کہ پاکستان مذہبی اقلیتوں اور خاص طور پر عیسائی فرقہ سے تعلق رکھنے والوں کی قدر نہیں کرتا۔ٹیڈ پو نے کہا کہ جو امداد ہم تعلیمی منصوبوں کے لیے کر رہے ہیں وہ ہمیں اپنی فوجی تربیت کے لیے کرنے چاہیے۔اس موقع پر کانگریس میں خطاب کرتے ہوئے سپیکر سے کہا کہ ہمیں اسی وقت پاکستان کو اس امداد سے لگ کرنا چاہیے۔امریکی اخراجات کا طریقہ کار قانون کے اندر موجود ہے جس کے تحت امریکہ کا وفاقی بحٹ محدود ہے۔یادرہے کہ اوباما انتظامیہ پر کانگریس نے یکم مارچ کو پابندیاں عائد کی تھیں۔گزشتہ سال فوجی تربیت کے لیے تقریباً سنتالیس ملین ڈالرز خرچ ہوئے اوراگر اس کا پاکستان سے موازنہ کیا جائے تو اعلیٰ تعلیم کے لیے بارہ اعشاریہ سات ملین ڈالرز خرچ ہوئے۔کانگریس میں موجود دیگر نمائندگان نے حال ہی میں مصر کے دو سو پچا ملین ڈالزر مختص کرنے پر اعتراض کیا۔ان کا کہنا تھا مذہبی انتہاپسندی کو روکنے میں پاکستان کی حکومت ناکام ہوئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی /Headlines