وزن کم کرنے کے بارے میں اب تک آپ جو کچھ کرتے آئے ہیں وہ بالکل غلط تھا، صحیح طریقہ سائنسدانوں نے بتادیا

وزن کم کرنے کے بارے میں اب تک آپ جو کچھ کرتے آئے ہیں وہ بالکل غلط تھا، صحیح ...
وزن کم کرنے کے بارے میں اب تک آپ جو کچھ کرتے آئے ہیں وہ بالکل غلط تھا، صحیح طریقہ سائنسدانوں نے بتادیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اکثر لوگ وزن میں کمی کے لیے ڈائٹنگ کرتے ہیں لیکن ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈائٹنگ وزن میں کمی لانے کا کوئی مناسب اور کارگر طریقہ نہیں ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق موٹاپا کم کرنے کی کوشش میں لگے اکثر لوگ اس بات پر توجہ دیتے کہ وہ کیا کھا رہے ہیں حالانکہ ایسے لوگوں کو اپنے کھانے کی عادات اور اوقات پر توجہ دینی چاہیے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ انسانی جسم کا نظام انہضام ان کے بائیولوجیکل کلاک(Biological Clock) کے تابع ہوتا ہے۔جب لوگ اپنی کھانے کی فطری عادت اور وقت سے ہٹ کر کھانا شروع کر دیتے ہیں تو ان کا نظام انہضام بگڑ جاتا ہے جس سے ان کے موٹاپے کے ساتھ ساتھ ذیابیطس میں مبتلا ہونے کے امکانات بھی بڑھ جاتے ہیں۔

مزید جانئے: وہ موٹی ترین خاتون جس نے فوجیوں کے نسخے پر عمل کرکے دنیا کو شدید حیرت میں مبتلا کردیا

ویزمین انسٹیٹیوٹ آف سائنس(Weizmann Institute of Science) کی تحقیقاتی ٹیم کے رکن ڈاکٹر گیڈ اشر(Gad Asher) کا کہنا ہے کہ” جب وزن کم کرنے کا معاملہ ہو تو ”آپ کیا کھاتے ہیں“ کے ساتھ ساتھ ”آپ کب کھاتے ہیں“ بھی انتہائی اہم ہوتا ہے۔ بائیولوجیکل کلاک بیکٹیریاسے مکھیوں اور انسانوں تک ہر ذی روح میں پایا جاتا ہے۔ یہ جانداروں میں کھانے اور نیند سمیت ہر جسمانی فعل کو منظم کرتا ہے۔ یہ کسی روزانہ کے کیلنڈر کی طرح ہوتا ہے جو جسم کو بتاتا ہے کہ اسے کب کیا کرنا ہے اور کب کس چیز کی توقع رکھنی ہے۔ لہٰذا جو لوگ وزن کم کرنے کے خواہش مند ہیں انہیں ڈائٹنگ پر جانے کی بجائے اپنی خوراک اور اس کے اوقات(باقاعدگی) پر توجہ دینی چاہیے۔ اس سے وہ بہتر نتائج حاصل کر سکیں گے۔“

مزید : تعلیم و صحت