امریکی فوج نے ایسا منصوبہ کامیاب بنادیا کہ پوری دنیا کے لئے یقین کرنا مشکل ہوگیا

امریکی فوج نے ایسا منصوبہ کامیاب بنادیا کہ پوری دنیا کے لئے یقین کرنا مشکل ...
امریکی فوج نے ایسا منصوبہ کامیاب بنادیا کہ پوری دنیا کے لئے یقین کرنا مشکل ہوگیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)2009ءمیں امریکہ میں ایک پالتو بن مانس نے خوفناک حملہ کرکے کارلا ناش (Charla Nash)نامی ایک خاتون کا چہرہ نوچ ڈالا اور ہاتھ بھی کاٹ دیئے تھے۔ اس حادثے کے 7سال بعد ڈاکٹر کارلا کا چہرہ ٹرانسپلانٹ کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق 62سالہ کارلا ناش اپنی دوست سینڈرا ہیرالڈ کے گھر گئی۔ سینڈرا نے ایک بن مانس پال رکھا تھا۔ اتفاق سے اس وقت بن مانس پنجرے سے نکل کر فرار ہونے کی کوشش کر رہا تھا کہ سامنے سے کارلا آ گئی اور بن مانس نے اس پر حملہ کر دیا۔ اس نے کارلا کے چہرے کا تمام گوشت، ہونٹ، ناک اور آنکھوں کے پپوٹے وغیرہ سب نوچ ڈالے اور ہاتھ بھی جسم سے کاٹ دیئے۔ اسی دوران سینڈرا نے یہ منظر دیکھا اور پولیس کو اطلاع دی اور پولیس نے آ کر بن مانس کو گولی مار کر ہلاک کر دیا اور کارلا کی جان بچا لی، تاہم اس کا چہرہ بری طرح مسخ ہو جانے کے باعث وہ دنیا سے کٹ کر رہ گئی تھی۔

مزید جانئے: امریکہ کو شمالی کوریا کا ایسا جواب کہ ’سپر پاور‘ کا دعویٰ کرنے والا منہ چھپانے لگا

رپورٹ کے مطابق بن مانس کے ذریعے کارلا میں ایک ایسی بیماری منتقل ہوئی جس سے اس کی آنکھیں بھی ضائع ہو گئیں اور وہ بینائی سے بھی محروم ہو گئی۔ اس کے چہرے کا ٹرانسپلانٹ کرنے کے لیے امریکی فوج نے مالی معاونت کی اور اس کیس کو ایک تجربے کے طور پر لیا گیا۔ ڈاکٹروں نے کارلا کے ہاتھ بھی ٹرانسپلانٹ کرنے کی کوشش کی تاہم اس کے جسم نے نئے ہاتھ قبول کرنے سے انکار کر دیا، لیکن ڈاکٹر اس کو نیا چہرہ لگانے میں کامیاب ہو گئے۔ برطانوی اخبار کی رپورٹ کے مطابق کارلا کا کہنا ہے کہ ”چہرے کے ٹرانسپلانٹ سے مجھے نئی زندگی ملی ہے۔ اس حادثے کے بعد میں بالکل اپنے گھر میں قید ہو کر رہ گئی تھی کیونکہ میرا چہرہ اتنا بھیانک ہو چکا تھا کہ میں باہر لوگوں کے سامنے نہیں جا سکتی تھی۔باہر جانے کے لیے مجھے چہرے پر نقاب لینا پڑتا تھا مگر اب میں ایک بار پھر لوگوں سے مل سکتی ہوں۔ “ واضح رہے کہ کارلا ناش ماضی میں ٹی وی اداکارہ رہ چکی ہے اور امریکی نیوی اور کوکا کولا کے اشتہارات سمیت کئی کمرشلز میں بھی کام کر چکی ہے۔

مزید : بین الاقوامی