میاں محمودالرشید نے بجٹ تجاویز کیلئے اپوزیشن جماعتوں کااجلاس طلب کر لیا

میاں محمودالرشید نے بجٹ تجاویز کیلئے اپوزیشن جماعتوں کااجلاس طلب کر لیا

لاہور (خبر نگار خصوصی)پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں محمودالرشید نے بجٹ2016-17 میں تجاویز دینے کیلئے تمام اپوزیشن جماعتوں کے پارلیمانی لیڈروں کا اجلاس آئندہ ہفتے طلب کر لیا، اجلاس میں جماعت اسلامی کے ڈاکٹر وسیم اختر، مسلم لیگ کے وقاص حسن موکل، خدیجہ عمر فاروقی، پیپلزپارٹی کے قاضی احمد سعید، خرم جہانگیر وٹو، تحریک انصاف کے شعیب صدیقی، ڈاکٹر مراد راس، میاں اسلم اقبال، سعدیہ سہیل، ڈاکٹر نوشین حامد ودیگر شرکت کرینگے ۔ بجٹ تجاویز کیلئے اپوزیشن لیڈر میاں محمودالرشید نے ماہر معاشیات، تعلیم، قانون دان، طبی ماہرین پر مشتمل ایک کمیٹی بھی تشکیل دیدی جو پیر کے روز اپنی تجاویز مرتب کریگی، یہ تجاویز متحدہ اپوزیشن کے اجلاس میں زیر بحت آنے کے بعد حکومت پنجاب کو دی جائینگی۔ پبلک سیکرٹریٹ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے میاں محمودالرشید کا کہنا تھا کہ حکومت کو چاہئے کہ آئندہ بجٹ میں تعلیم، صحت، صاف پانی اور دیگر مفاد عامہ کے منصوبوں کیلئے زیادہ فنڈز مختص کئے جائیں، انکا کہنا تھا کہ حکومت نے مالی سال2015-16میں عوامی منصوبوں کیلئے جو بجٹ مختص کیا اسکا نصف بھی خرچ نہیں کیا جا سکا جس کے باعث تعلیم، صحت جیسے بنیادی شعبوں کو درپیش مسائل جوں کے توں رہے، پنجاب اسمبلی کے آئندہ اجلاس میں اس پر بات کرینگے، ایک سوال کے جواب میں اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ بجٹ میں ناصرف تجاویز دینگے بلکہ اسے ہر صورت شامل بھی کرائینگے اور اگر حکومت نے اپوزیشن کی تجاویز کو اہمیت نہ دی تو متحدہ اپوزیشن بجٹ سیشن کا بائیکاٹ کریگی۔

مزید : صفحہ آخر