دہشتگردی سے متاثرہ صوبہ خیبر پختونخوا کو راہداری منصوبہ میں اولیت دینا گزیر ہے ، آفتاب شیر پاؤ

دہشتگردی سے متاثرہ صوبہ خیبر پختونخوا کو راہداری منصوبہ میں اولیت دینا گزیر ...

 صوابی( بیورورپورٹ) قومی وطن پارٹی کے مرکز ی چیر مین اور سابق وزیر داخلہ آفتاب احمد خان شیر پاؤ نے ہفتہ کے روز صوابی کا دورہ کیا۔ اس دوران انہوں نے موضع اسماعیلہ میں انجمن کاشتکاران کے صوبائی سیکرٹری جنرل و ن لیگ کے رہنما حاجی اسماعیل جان خان ایڈوکیٹ کی وفات پر اور بعد ازاں موضع یار حسین میں اے این پی کے رہنما احمد علی خان کی ہمشیرہ کی وفات پر الگ الگ تعزیت کااظہار کیا اور مرحومین کی ایصال ثواب کے لئے دُعا کی ۔ ضلعی چیر مین مسعود جبار ، مرکزی سیکرٹری اطلاعات محمد سلیم خان ایڈوکیٹ ،مرکزی رہنما محمد جمیل خان ایڈوکیٹ ، حاجی فیاض علی خان ، صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری افتخار خان زیدہ اور دیگر رہنما بھی ان کے ہمراہ تھے سپیکر پختونخوا اسمبلی اسد قیصر نے بھی یار حسین میں احمد علی خان کی ہمشیرہ کی وفات پر فاتحہ خوانی کی اس موقع پر آفتاب احمد خان شیر پاؤ اور سپیکر اسد قیصر کے مابین چائنہ پاک اکنامک راہداری منصوبے کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا اور حکومت و اپوزیشن کے موقف کاا عادہ کر تے ہوئے کہا کہ مغربی روٹ پر اپوزیشن اور حکومت کا موقف ایک ہے آفتاب احمد خان نے اس موقع پر واضح کیا کہ پاک چائنہ اقتصادی راہداری منصوبے میں صوبہ خیبر پختونخوا کو نظر انداز کر نے کے بارے میں دسمبر 2014میں دورہ صوابی کے موقع پر اخباری کانفرنس میں اپنے موقف کا اظہار کیا تھا۔ اور واضح کر دیا تھا کہ اگر اس منصوبے میں خیبر پختونخوا کو نظر انداز کیا گیا تھا تو اس کے خلاف بھر پور احتجاج کیا جائیگا۔ آفتاب احمد خان شیر پاؤ نے کہا کہ صوبہ خیبر پختونخوادہشت گردی کی وجہ سے پاکستان میں سب سے زیادہ متاثر ہو ا ہے۔اس لئے یہ منصوبہ اس بد حال صوبے کے لئے انتہائی ضروری ہے تاکہ اس سے نہ صرف صوبہ ترقی کر سکے بلکہ بے روزگار لوگوں کو اس میں روزگار میسر ہو سکے اگر چہ حکومت نے مغربی روٹ کی تعمیر کا وعدہ کیا ہے لیکن تاحال عملی اقدامات نظر نہیں آرہے ہیں اس لئے حکومت کو چاہئے کہ وہ عملی طور پر جلد از جلد مغربی روٹ پر کام شروع کیا جائے#

مزید : کراچی صفحہ اول