حقوق نسواں بل کی منظوری، دارالامان ملتان میں خواتین کی تعداد بڑھنے لگی

حقوق نسواں بل کی منظوری، دارالامان ملتان میں خواتین کی تعداد بڑھنے لگی

  

ملتا ن (خاتون رپورٹر)حقوق نسواں بل منظور ہونے سے ملتان دار لامان میں خواتین کی تعداد میں اضافہ ہوگیا۔ ذرائع کے مطابق محکمہ سوشل ویلفیئر کے ادارے دارلامان میں 41خواتین اور6بچے مقیم ہیں ۔ جنوری 2016سے 19مارچ تک دارامان میں داخل ہونے والی خواتین کی تعداد 13ہیں انتظامیہ کے مطابق دار لامان میں 80فیصد خواتین طلاق یافتہ ہیں ۔ رواں سال حقوق نسواں بل پاس ہونے سے طلاق یافتہ خواتین کی تعداد حد سے تجاوز کررہی ہیں جوکہ تشویش ناک ہے دار الامان میں رہائش پزیر خواتین میں سے90فیصد خواتین طلاق یافتہ ہیں اس ضمن میں دار لامان کی انچارج شہوار فاطمہ کاکہناہے دارلامان میں رہنے والی خواتین کو ا دارے کی طرف سے مکمل تحفظ حاصل ہے کسی بھی خاتون کو ذاتی موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت نہیں یہ عمل ان کی سیکورٹی کے انتظامات کوبہتر بنانے کیلئے تشکیل دیاگیا۔ ان خواتین کے بچوں کو دار لامان میں غیر رسمی تعلیم فراہم کی جاتی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -