امریکی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون جنگی کمانڈ کی سربراہی کیلئے نامزدکر دیا گیا

امریکی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون جنگی کمانڈ کی سربراہی کیلئے نامزدکر دیا ...
امریکی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون جنگی کمانڈ کی سربراہی کیلئے نامزدکر دیا گیا

  

واشنگٹن(ویب ڈیسک) امریکہ کے سیکرٹری دفاع ایشٹن کارٹر نے امریکہ کی فوجی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک خاتون کو جنگی کمانڈ کی سربراہی کیلئے نامزد کیا ہے۔ امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں ایک تقریب کے دوران ایش کارٹر نے اعلان کیا کہ جنرل لوری رابنسن کو امریکی فوج کی ناردرن کمانڈ کی سربراہی کیلئے نامزد کیا گیا ہے ۔ اس عہدے کا شمار امریکی فوج کے اعلیٰ ترین عہدوں میں ہوتا ہے اور سینیٹ سے اس کی توثیق ضروری ہے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

جنرل لوری رابنسن پیسیفک ائیرفورسز کی کمانڈر ہیں اور انہوں نے 1982 ءمیں امریکی فضائیہ میں شمولیت اختیار کی تھی۔ امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق لوری رابنسن کا جنوری میں اس عہدے پر تعینات کیا جانا متوقع ہے۔ اگر انہیں تعینات کر دیا گیا تو وہ ایڈ مرل بل گورٹنی کی جگہ سنبھال لیں گی جو 2014 ءسے اس عہدے پر تعینات ہیں ۔ خیال رہے کہ گزشتہ سال دسمبر میں ایش کارٹر کی جانب سے امریکی فوج کے تمام جنگی فرائض کیلئے خواتین کی شمولیت کی اجازت دی گئی تھی۔ اس فیصلے سے خواتین کیلئے دولاکھ 20 ہزار سے زائد آسامیاں دستیاب ہوئی تھیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاو¿ن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔

مزید : بین الاقوامی