مآرب میں مسجد پر حملہ حوثیوں کے حقیقی چہرہ کا عکاس ہے، یمنی صدر

مآرب میں مسجد پر حملہ حوثیوں کے حقیقی چہرہ کا عکاس ہے، یمنی صدر

عدن (این این آئی)یمن کے صدر عبد ربہ منصور ہادی نے صوبے مآرب میں ایک فوجی اڈے پر واقع ایک مسجد پر حوثی باغیوں کے میزائل حملے کو ایک بدنما داغ اور دہشت گردی کا حقیقی چہرہ قرار دیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق صدر منصور ہادی نے ایک بیان میں کہا کہ حوثی ملیشیا کی دہشت گردی کو کسی صورت قبول نہیں کیا جاسکتا ہے اور حوثی جنگجو دہشت گردی کے تمام پہلوؤں کے نمائندہ ہیں۔مآرب میں نماز جمعہ کے وقت حوثی باغیوں کے میزائل حملے میں فوجیوں سمیت چونتیس افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔یمنی حکام کے مطابق حوثی ملیشیا نے مآرب کے مغرب میں واقع علاقے کفال میں ایک فوجی کیمپ میں مسجد پر دو کاتیوشا طرز کے میزائل داغے تھے۔یمن کے وقف اور دعوت وارشاد کے وزیر احمد عطیہ نے کہا کہ مساجد کو حملوں میں نشانہ بنایا جانا ایک جنگی جرم ہے اور حوثی ملیشیا کے پاس اس حملے کا کوئی جواز نہیں ہے۔حوثیوں کے زیرانتظام خبررساں ایجنسی نے اعتراف کیا کہ یہ حملہ حوثی باغیوں ہی نے کیا تھا اور انھوں نے بھاری توپ خانے سے مسجد کو نشانہ بنایا ہے۔واضح رہے۔یہ کوئی پہلا موقع نہیں کہ حوثی شیعہ باغیوں نے یمن میں ایک مسجد پر اس طرح کا تباہ کن میزائل حملہ کیا ہے۔ وہ اس سے پہلے بھی مختلف شہروں میں مساجد کو اپنے حملوں میں نشانہ بنا چکے ہیں اور ان میں بیسیوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوگئے تھے۔

مزید : عالمی منظر