حکومت،وزارت پانی و بجلی کے دعوؤں کے باوجود پاور سیکٹر کے زیر گردش قرضوں کے حجم میں مسلسل اضافہ

حکومت،وزارت پانی و بجلی کے دعوؤں کے باوجود پاور سیکٹر کے زیر گردش قرضوں کے ...

ملتان (سٹاف رپورٹر) حکومت ،وزارت پانی وبجلی سمیت مختلف اداروں کے دعوؤں کے باوجود پاور سیکٹر کے زیر گردش قرضوں ( سرکلر ڈیٹ ) کے حجم میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

15 فروری 2017ء کو تصدیق اور آڈٹ شدہ رقم 414 ارب روپے تھی۔ ذرائع کے مطابق 15 مارچ 2017ء تک قرضوں کی رقم میں 15 ارب روپے سے زائد کا مزید اضافہ ہوا ہے۔ موجودہ حکومت نے 11 مئی 2013ء کو برسراقتدار آتے ہی جون 2013ء میں 480 ارب روپے کے قرضوں کی ادائیگی کی تھی۔بتایا گیا ہے کہ ساڑھے تین سال میں قرضوں کا حجم 414 ارب روپے کی بلند سطح پر پہنچ گیا ہے۔ ادائیگی نہ ہونے کی وجہ سے پاکستان سٹیٹ آئل بھی بحران کا شکار ہوگیا ہے۔

زیر گردش قرضے

مزید : ملتان صفحہ آخر