پاکستان میں جمہوریت کے نام پر بادشاہت قائم ہے،ڈاکٹر محمد افضل

پاکستان میں جمہوریت کے نام پر بادشاہت قائم ہے،ڈاکٹر محمد افضل

ہیڈراجکاں(نامہ نگار) حکومت مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے، پاکستان میں جمہوریت کے نام پر بادشاہت قائم ہے ، عوام سے جمہوریت کے نام پر مذاق ہو رہا ہے ، انصاف کے اداروں پر شریف مافیاء کا قبضہ ہے ،، حکمران عوامی فلاح و بہبود کے بجائے امیروں کے مفاد میں پالیسیاں بنا رہے ہیں، ملک معاشی بد حالی کا شکار، مہنگائی، بے روزگاری، لوڈشیڈنگ، اور کرپشن نے ملک وقوم کو بد حال کر دیا ہے(بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

، ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ق) کے ممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر محمد افضل نے گزشتہ روز 114ڈی این میں محمد افضل بھٹی کے بیٹوں کی دعوت ولیمہ کے بعد مختلف وفود سے گفتگو کے دوران کیا، ، انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے 4سالوں میں عالمی اداروں سے ریکارڈقرض لینا انتہائی تشویشناک ہے ، کشکول توڑنے والوں نے مسلسل عوام سے جھوٹ بولا ہے ، کوئی بھی ملک قرضے لے کر نہ تو معیشت کو ئی سہارا دے سکتا ہے اور نہ دنیا میں باعزت مقام پاسکتا ہے ، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں وسائل کی کمی نہیں حکمرانوں کو اپنی شاہانہ طرز زندگی کو ختم لوٹ مار کا بازار بند اور بیرونی قوتوں سے ڈکیٹیشن لینے کا سلسلہ ختم کر نا ہو گا،ہمیں قرضوں سے نجات کیلئے اپنے قدرتی وسائل کو بروئے کار لانا ہوگا، قرضے ملکی معیشت میں استحکام کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں ، حکومت کے غیر سنجیدہ اقدامات کی وجہ سے اس وقت ہر پاکستانی لاکھوں کا مقروض ہو چکا ہے ۔ محمد وسیم چودھری، محمد ندیم اسلم چانڈیو، چودھری ندیم انجم کونسلر، چودھری اشفاق حسین ، نعیم الحسن خان، مقصو د چیمہ، احمد خالد سدھو، حاجی سلیم احمد ، سلیم نواز بھٹی ، کونسلر چودھری عمران اصغر، ان کے ہمراہ تھے ۔پاکستان میں جمہوریت کے نام پر بادشاہت قائم ہے،ڈاکٹر محمد افضل

ہیڈراجکاں(نامہ نگار) حکومت مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے، پاکستان میں جمہوریت کے نام پر بادشاہت قائم ہے ، عوام سے جمہوریت کے نام پر مذاق ہو رہا ہے ، انصاف کے اداروں پر شریف مافیاء کا قبضہ ہے ،، حکمران عوامی فلاح و بہبود کے بجائے امیروں کے مفاد میں پالیسیاں بنا رہے ہیں، ملک معاشی بد حالی کا شکار، مہنگائی، بے روزگاری، لوڈشیڈنگ، اور کرپشن نے ملک وقوم کو بد حال کر دیا ہے(بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

، ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ق) کے ممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر محمد افضل نے گزشتہ روز 114ڈی این میں محمد افضل بھٹی کے بیٹوں کی دعوت ولیمہ کے بعد مختلف وفود سے گفتگو کے دوران کیا، ، انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے 4سالوں میں عالمی اداروں سے ریکارڈقرض لینا انتہائی تشویشناک ہے ، کشکول توڑنے والوں نے مسلسل عوام سے جھوٹ بولا ہے ، کوئی بھی ملک قرضے لے کر نہ تو معیشت کو ئی سہارا دے سکتا ہے اور نہ دنیا میں باعزت مقام پاسکتا ہے ، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں وسائل کی کمی نہیں حکمرانوں کو اپنی شاہانہ طرز زندگی کو ختم لوٹ مار کا بازار بند اور بیرونی قوتوں سے ڈکیٹیشن لینے کا سلسلہ ختم کر نا ہو گا،ہمیں قرضوں سے نجات کیلئے اپنے قدرتی وسائل کو بروئے کار لانا ہوگا، قرضے ملکی معیشت میں استحکام کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں ، حکومت کے غیر سنجیدہ اقدامات کی وجہ سے اس وقت ہر پاکستانی لاکھوں کا مقروض ہو چکا ہے ۔ محمد وسیم چودھری، محمد ندیم اسلم چانڈیو، چودھری ندیم انجم کونسلر، چودھری اشفاق حسین ، نعیم الحسن خان، مقصو د چیمہ، احمد خالد سدھو، حاجی سلیم احمد ، سلیم نواز بھٹی ، کونسلر چودھری عمران اصغر، ان کے ہمراہ تھے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر