نجی تعلیمی ادارے کے پرنسپل،ٹیچر کا3معصوم طلبہ پر وحشیانہ تشدد

نجی تعلیمی ادارے کے پرنسپل،ٹیچر کا3معصوم طلبہ پر وحشیانہ تشدد

ملتان ( سٹاف رپورٹر ) وزیراعلی پنجاب کے نعرے مار نہیں پیار کے برعکس نجی تعلیمی ادارے کے پرنسپل اور پی ٹی ماسٹر کا تین معصوم طلبہ پر بہیمانہ تشدد، معصوم بچوں کو ایک گھنٹہ تک ڈنڈوں، ٹھڈوں ، مکوں سے نشانہ بناتے رہے ،(بقیہ نمبر54صفحہ12پر )

والدین کا وزیراعلی پنجاب، گورنر پنجاب، ووزیر تعلیم سے نوٹس لینے کا مطالبہ ، دین پور کے علاقہ میں نجی تعلیمی ادارے مثالی زکریا ہائی سیکنڈری سکول کے پرنسپل اور پی ٹی ماسٹر نے تین معصوم طلبہء طلال، زین، عمار پر تشدد کی انتہاء کردی اس سلسلے میں متاثرہ طالبعلم طلال نے صحافیوں کو بتایا کہ سکول پرنسپل اور پی ٹی ماسٹر نے معصوم طلبہ پر تشدد کی انتہاء کر رکھی ہے آئے روز معمولی معمولی باتوں پر طلبہ کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے لیکن انہیں پوچھنے والا کو ئی نہیں ہے یہاں تک کہ محکمہ تعلیم بھی اس سلسلے میں نوٹس نہ لے رہی ہے اور سکول انتظامیہ کی جانب سے متاثرہ طلبہ کو سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دی جا رہی ہیں جو پنجاب حکومت کے نعرے مار نہیں پیار کے برعکس ہے اگر یہی صورتحال رہی تو کو ئی بھی شخص تعلیمی اداروں میں معصوم بچوں پر تشدد کے پیش نظر داخل نہیں کرا سکے گا انہوں نے وزیراعلی پنجاب ، گورنر پنجاب ، محکمہ تعلیم پنجاب سے فوری طور پر نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور آج متاثرہ طالبعلم کے اہلخانہ گورنر پنجاب سے بھی اس سلسلے میں صورتحال سے آگاہ کریں گے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر