ینگ ڈاکٹرز حکومتی اقدامات سے نالاں‘ انتظامات ناکافی قرار دیدئیے

ینگ ڈاکٹرز حکومتی اقدامات سے نالاں‘ انتظامات ناکافی قرار دیدئیے

  



ملتان (نیوز رپورٹر) نشتر ہسپتال میں کورونا کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اقدامات سے ڈاکٹر ناخوش،ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن ملتان کی پریس کانفرنس،نشتر ہسپتال میں کورونا پھیلنے کا خدشہ پیدا ہو گیا تفصیل کے مطابق گزشتہ روز ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے چئیر مین ڈاکٹر خضر حیات،صدر ڈاکٹر فاران اسلم،چئیر مین ڈاکٹر چودھری عتیق،ڈاکٹر عدنان (بقیہ نمبر5صفحہ12پر)

ملک اور دیگر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ملک میں ہیلتھ ایمرجنسی پر ڈاکٹرز کیلے حکومت اور لوکل انتظامیہ کے انتظامات ناکافی ہیں،حکومت کورونا مریضوں کیلئے ہسپتال اور قرنطینہ سینٹر شہر کی حدود سے باہر بنائے،نشتر انتظامیہ ڈکٹرز اور دیگر عملہ صحت کو ماسک، سینیٹائزرز، گاؤں مہیا کرے،ینگ ڈاکٹرز ملک میں اس ایمرجنسی کی صورت میں کسی احتجاج یا ہڑتال کے حق میں نہیں ہیں،ڈاکٹروں میں غیر یقینی کی کیفیت پیدا ہو چکی ہے،حفاظتی انتظامات کے بغیر خدمات مہیا کرنا کسی خطرہ سے خالی نہیں ہے اس موقع پر ینگ ڈاکٹرز کا مزید کہنا تھا کہ ایک ڈاکٹر سینکڑوں مریضوں کو روازنہ کی بنیاد پر دیکھتا ہے یہ کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے میں رکاوٹ ہیپوری دنیا میں تمام وسائل کو ایمرجنسی اور کورونا کے مریضوں کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے،ینگ ڈاکٹرز خون کے آخری قطرہ تک عوام کی خدمت کرتے رہیں گے،اللہ تعالیٰ اس ملک کو اور پوری انسانیت کو اس وبا سے نجات دلائے،ینگ ڈاکٹر کورونا کے خلاف جنگ میں حکومت اور نشتر انتظامیہ کا ساتھ دیں گے تاہم حکومت ہسپتالوں میں مریضوں کے لواحقین کے رش کو ہسپتالوں میں کم کرے،عوام الناس سے گزارش ہے کہ وہ معمولی بیماریوں کیلیے قریبی ڈاکٹرز سے رجوع کریں اور ریڈ زون سے دور رہیں

ینگ ڈاکٹرز

مزید : ملتان صفحہ آخر