سپیکر اسد قیصر کی ملاقات، کرونا پر کنٹرول کیلئے حکومت اور اپوزیشن پر مشتمل پارلیمانی کمیٹی بنانے پراتفاق، پاکستان وائرس کیخلاف جنگ جیتے گا: وزیراعظم

    سپیکر اسد قیصر کی ملاقات، کرونا پر کنٹرول کیلئے حکومت اور اپوزیشن پر ...

  



اسلام آ باد (سٹاف رپورٹر)وزیر اعظم عمران خان سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصرنے ملاقات کی جس میں کرونا وائرس کی صورتحال اور اس پر کنٹرول کے حوالے سے حکومت اور اپوزیشن پر مشتمل پارلیمانی کمیٹی کے قیام پر بھی اتفاق کیا گیا،ملاقات میں کرونا وائرس کی صورتحال اور کنٹرول کے حوالے سے حکومتی سطح پر کیے جانے والے اقدامات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہاکہ کرونا وائرس پر کنٹرول کے حوالے سے چین کا تعاون قابل ستائش ہے،کرونا وائرس پر کنٹرول اور اس کے اثرات سے عوام اور ملکی معیشت کو محفوظ رکھنے کیلئے بین الاقوامی اداروں سے بھی رابطے میں ہیں جبکہ عوام کو ریلیف پہنچانے کیلئے تمام وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا،کرونا کے حوالے سے ڈرنے کی بجائے احتیاطی اقدامات اختیارکیے جائیں۔

فیصلہ

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کرونا سے خوف کی نہیں صرف احتیاط کی ضرورت ہے، انشا اللہ پاکستان کرونا وائرس کے خلاف جنگ جیتے گا،چین کی کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے معاونت کو فراموش نہیں کر سکتے، پاکستانی بطور قوم متحد ہو کر وائرس کو شکست دیں گے۔ جمعرات کو وزیراعظم سے سابق وزیر قانون بابر اعوان نے ملاقات کی ہے جس میں کرونا وائرس اور اس پر قابو پانے کے حوالے سے اقدامات پر بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر عمران خان کا کہنا تھا کرونا وائرس پر کنٹرول کے حوالے سے چین کا تعاون قابل ستائش ہے، چین کی کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے معاونت کو فراموش نہیں کر سکتے، پاکستانی بطور قوم متحد ہو کر وائرس کو شکست دیں گے، وائرس کے اثرات کے تناظر میں عالمی اداروں کو اعتماد میں لیا جا رہا ہے، کرونا کے حوالے سے تمام اقدامات کی خود نگرانی کر رہا ہوں جبکہ عوام کو ریلیف پہنچانے کے لیے تمام وسائل کو برے کار لایا جائے گا۔بعدازاں وزیر اعظم سے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے ملاقات کی،جس میں ریلوے سمیت عوامی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔بعدازاں وزیر اعظم عمران خان کے زیر صدارت اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا،جس میں کرونا کے پیش نظر تعلیمی اداروں میں سرگرمیاں معطل کیے جانے اور اس دوران طلباء کو تعلیمی مواقع فراہم کرنے کے حوالے سے اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔وزیر اعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ قومی یکساں نصاب تعلیم میں آنحضور ؐ کی سیرت مبارکہ،بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناحؒ اور برصغیر پاک و ہند کے عظیم مفکر شاعر مشرق علامہ محمد اقبالؒ کے افکار اور سوچ کو نصاب کا حصہ بنایا جائے۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی نصاب تعلیم کا مقصد جہاں نئی نسل کو جدید دور کے تقاضوں اور چیلنجز کیلئے تیارکرنا ہے وہاں ان میں معاشرتی اقدار کو اجاگر کرنا ہے تاکہ بحثیت قوم ہمارا تشخص اجاگر ہو۔وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ یکساں نصاب کو رائج کرتے ہوئے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ نصاب کی کتابوں کی اشاعت کے حوالے سے مافیا کے عمل دخل کو مکمل طور پر ختم کیا جائے۔وزیر اعظم کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ ملک بھر میں یکساں نصاب تعلیم رائج کرنے کے حوالے سے پہلا مرحلہ مکمل کرتے ہوئے پہلی سے پانچویں جماعت تک کیلئے نصاب تعلیم تیار کرلیا گیا،چھٹی سے آٹھویں جماعت تک کا قومی نصاب مارچ 2022، نہم سے بارھویں جماعت تک کا قومی نصاب مارچ 2023تک مکمل طور پر رائج ہو جائے گا۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ وزارت تعلیم نے تعلیمی سرگرمیوں کے حوالے سے پاکستان ٹیلی ویژن کے ذریعے سات گھنٹوں کی تعلیمی نشریات کا اہتمام کیا ہے تاکہ طلبا اپنے گھروں پر رہتے ہوئے تعلیمی چینل کے ذریعے اپنی تعلیمی سرگرمیاں جا ری رکھ سکیں اوران کی تعلیم میں کسی قسم کا کوئی حرج نہ ہو۔علاوہ ازیں وزیر اعظم عمران خان سے وزیر داخلہ بریگیڈیئر (ر) اعجاز احمد شاہ نے ملاقات کی، چیئرمین این ڈی ایم اے اور چیئرمین سی ڈی اے بھی موجود تھے۔چیئرمین این ڈی ایم اے نے وفاقی دارالحکومت سمیت ملک بھر میں کرونا کے خلاف حفاظتی اقدامات کے حوالے سے پیش رفت پر وزیر اعظم کو بریفنگ دی۔

وزیراعظم عمران خان

مزید : صفحہ اول