کرونا سے نمٹنے کیلئے 2کروڑ ماسک، 10ہزار وینٹی لیٹرز درکار، نیشنل ڈیز اسٹرمینجمنٹ اتھارٹی

  کرونا سے نمٹنے کیلئے 2کروڑ ماسک، 10ہزار وینٹی لیٹرز درکار، نیشنل ڈیز ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے این ڈی ایم اے نے وزارت خارجہ کو2 کروڑ ماسک 20لاکھ سینیٹائزر،ڈھائی لاکھ این95ماسک اور10ہزار وینٹی لیٹرز دنیا بھر کے پاکستانی سفارتخانوں کوبندوبست کرنے کیلئے خط لکھ دیا۔ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے وزارت خارجہ کو لکھے گئے خط میں ضروری ساز و سامان پر مشتمل فہرست بھیجی گئی ہے جو دنیا بھر میں موجود پاکستانی سفارتخانوں کو بھجوانے کی درخواست کی گئی ہے۔خط میں کہا گیا ہے کہ پاکستانی سفارتخانے ضروری سامان کی فراہمی میں تعاون کریں، کرونا سے نمٹنے کیلئے 2کروڑ سرجیکل ماسک اور20 لاکھ سینیٹائزر درکار ہیں، ایک لاکھ تھرمل گنز، ڈھائی لاکھ این95ماسک،10 ہزار وینٹی لیٹرز، ایک لاکھ پی سی آر لیب کٹس،50لاکھ بائیو ہائبرڈ بیگز کی ضرورت ہے۔ خط میں پاکستانی سفارتخانوں سے فہرست میں شامل سامان کابندوبست کرنے کی درخواست کی گئی۔

این ڈی ایم اے

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے) نے کورونا وائرس کے بڑھتے کیسز کے پیشِ نظر ملک کے بڑ ے ہوٹلز کو قرنطینہ سینٹرز میں تبدیل کرنے کی تجویز دیدی۔نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے ملک میں بڑے ہوٹلز کو قرنطینہ سینٹرز میں تبدیل کرنے کیلئے صوبوں کے چیف سیکریٹریز کو خط ارسال کیا ہے۔این ڈی ایم اے کی جانب سے آزاد کشمیر سمیت تمام صوبوں کے چیف سیکرٹریز کو 16 مارچ کو خط لکھا گیا جس میں کہا گیا کہ کورونا وائرس کو مزید پھیلاؤ سے روکنے کے اقدامات کے پیش نظر ملک میں تھری اور فور اسٹار ہوٹلز کو خالی کرواکر قرنطینہ مراکز میں تبدیل کیا جائے۔خط میں کہا گیا کہ کورونا وائرس کے ایک مشتبہ شخص کیلئے ایک کمرہ کی پالیسی اپنائی جائے۔خط میں ہدایت دی گئی ہے کہ این ڈی ایم اے کو قرنطینہ مراکز کی تفصیلات سے فوری طور پر آگاہ کیا جائے۔

ہوٹلز قرنطینہ تجویز

مزید : صفحہ اول