لاک ڈاؤن کی صورت میں پنجاب میں غریبوں کو مالی امداد دینے کا فیصلہ

      لاک ڈاؤن کی صورت میں پنجاب میں غریبوں کو مالی امداد دینے کا فیصلہ

  



لاہور(جنرل رپورٹر) کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیئے پنجاب حکومت کے بڑوں نے سر جوڑ لیے، کورونا وائرس سے متاثرہ افراد اور لاک ڈاون کی صورت میں غربت کی سطح سے نیچے رہنے والے افراد کو مالی امداد دینے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ پاکستان میں کورونا وائرس سے دو ہلاکتوں کے بعد تھرتھلی مچ گئی۔ کورونا وائرس کے نقصانات سے بچنے اور اس کے ازالے کے لئے پنجاب حکومت کے تھنک ٹینکس نے سر جوڑ لیے ہیں۔ ذرائع کے مطابق کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کو مالی امداد دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کیلیے سوشل پروٹیکشن اتھارٹی کو ڈیٹا تیار کرنے کی ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔ مالی امداد کے لیے غربت کا سکور 20 فیصد سے بڑھا کر 40 فیصد تک کرنے کی تجویز زیرغور ہے جبکہ شہروں کے لاک ڈاون کی صورت میں غربت کی سطح سے نیچے رہنے والے افراد کوبھی مالی امداد فراہم کی جائے گی،۔

مالی امداد

لاہور(جنرل رپورٹر)کرونا وائرس پھیلنے سے بچاؤ کے لیئے سرکاری ہسپتالوں کے آؤٹ ڈورز بند کرا دیئے گئے ہیں جبکہ بعض محکموں میں ملازمین کو بھی آنے سے روک دیا گیا ہے جو افیسرز دفاتر میں آئیں گے ان سے پانچ اپریل تک سائل ملاقات نہیں کر سکیں گے۔ہسپتالوں کے آؤٹ ڈورز بند ہونے سے مریضوں کو ڈاکٹرز میسر نہ آسکے جس سے وہ اپنا چیک آپ بھی نہ کروا سکے۔زرائع کا کہنا ہے کہ انظامی افسروں سے پانچ اپریل تک سائل ملاقات نہیں کر سکیں گے یہ احکامات زبانی دیئے گئے ہیں اس کا کوئی تحریری حکم نہیں ہوا۔

آؤ ٹ ڈور

مزید : صفحہ اول