کرونا وائرس کے نام پر بھیک مانگنا شرمناک ہے،خادم رضوی

کرونا وائرس کے نام پر بھیک مانگنا شرمناک ہے،خادم رضوی

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم رضوی نے کہا ہے کہ مدینے کی ریاست میں کشکول پکڑ کر دنیا سے بھیک نہیں مانگی جاتی تھی۔کرونا وائرس کے نام پر بھیک مانگنا نام نہاد حکمرانوں کیلئے باعث شرمندگی ہے۔خلفاء راشدین کے دور حکومت کے اقدامات کی مثالیں دینا آسان ہیں۔ مثالیں دینے والا وزیر اعظم پہلے خود ان کے احکامات کی پیروی کرے۔علماء کی تقریروں اور محفلوں پر مقدمات درج کردیے جاتے ہیں۔توہین رسالت،توہین انبیاء،توہین صحابہ اور توہین اولیاء کرنے والوں کو پروٹوکول دیا جاتا ہے۔دین اسلام کو کھانے پینے کا کاروبار نہ بنایا جائے۔علامہ خادم حسین رضوی نے مزید کہاحکمران اپنے ذاتی اخراجات پورے کرنے کیلئے مغرب سے بھیک مانگ رہے ہیں۔

 موجودہ حکومت نے سترہ ماہ میں 10ارب ڈالر سے زائد کے قرضے لیے لیکن اس کے متبادل عوام کو ایک پیسے کا فائدہ نہیں دیا گیا ہے۔اب کرونا وائرس کے نام پر پھر ایک ارب سے زائد کے قرضے لیے جا رہے ہیں۔عمران خان کا ایک ہی مشن ہے قرضوں لو اور ملک کو مزید کمزور کرو۔

مزید : میٹروپولیٹن 1