کورونا وائرس پر قابو پانے کیلئے چین کے تجربات سے استفادہ کیا جائے: زرک خان

  کورونا وائرس پر قابو پانے کیلئے چین کے تجربات سے استفادہ کیا جائے: زرک خان

  



لاہور(کامرس ڈیسک)پاک چین جوائئینٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر زرک خان نے حکومت کو تجویز دی ہے کہ پاکستان میں کو رونا وائرس پا قابو پانے کیلئے چینی تجربات سے استفادہ کیا جائے۔ پاک چین چیمبر میں طبی اور معاشی ماہرین کے ایک مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معاشی صورتحال اس قابل نہیں کہ کورونا وائرس کی وجہ سے معاشی سرگرمیوں کو زیادہ دیر تک معطل رکھا جا سکے۔ اس لئے ہمیں کورونا سے جلد سے جلد چھٹکارہ پانے کیلئے چین کے تجربات کو پاکستان میں دہرانے کی ضرورت ہے جس طرح انہوں نے اپنے کثیر الآبادی ملک کو چند ماہ میں کورونا کے اثرات سے بچا لیا ہے۔ ہم بھی اسے مزید پھیلنے سے روک سکیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں چینی طریق کار میں سب سے اہم پہلو تیز رفتاری ہے کہ جتنی جلدی کورونا کے کیسز تلاش ہونگے اتنی جلد ی الگ کر کے ان پر قابو پا یا جاسکے گا۔ انہو ں نے بتا یا کہ چین نے یہ کامیابی اپنے ایمرجنسی سنٹرز کو عوام کے ساتھ منسلک کر کے حاصل کی ہے۔ اگرچہ یہ ایک مشکل کام ہے مگر چین کی طرح جب تک ہم بھی ہر شہری کو مانیٹر نہیں کریں گے، اس بلا سے نجات مشکل ہوگی۔زرک خان نے کورونا کے خلاف لڑائی میں چین کی طرف سے فراہم کردہ ہنگامی امداد پر چینی حکومت اور چینی سفارتخانہ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان کو چین کی طرف سے فراہم کی گئیں۔

12000 ٹیسٹ کِٹس، 300,000ماسک، 10,000حفاظتی ملبوسات اور کورونا ہسپتال قائم کرنے کیلئے 4 ملین ڈالر کی رقم پاکستانی قوم کیلئے ایک بہت بڑی خدمت ہے جو پاکستانی قوم ہمیشہ یاد رکھے گی۔اس موقع پر پاک چین چیمبر کے سینئر نائب صدر معظم گھرکی اور سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف نے بھی کورونا جیسے مہلک وائرس کے خلاف جنگ میں چین کی کامیابی پر خراج تحسین پیش کیا۔معظم گھرکی نے اپنے خطا ب میں بتا یا کہ چین نے کم مدت میں دو نئے ہسپتال بھی قائم کئے ہیں۔

جن میں پندرہ دنوں میں ہزار بیڈ اور چھ دنوں میں سو بیڈ کا ہسپتال شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ پری فیبریکیٹڈ ہسپتال قائم کرنے کے علاوہ چین نے پہلے سے موجود ہسپتالوں میں متعدد آئسولیشن وارڈ ز تشکیل دینے کا بھی کامیاب تجربہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں بھی اسی طرز پر کورونا کے خلاف ہنگامی حکمت عملی تشکیل دینے کیلئے چینی ماہرین کی خدمات حاصل کرنی چاہییں۔اس سلسلے میں پاک چین چیمبر کے سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ معیشت کی بقاء ایک صحت مند معاشرے کے بغیرممکن نہیں۔ اس لئے حکومت، حزب اختلاف، کاروباری برادری اور قوم کو سب کچھ بھول کر اس وقت صرف اور صرف کورونا کے خلاف جہاد پر توجہ دینی چاہیے۔انہوں نے بھی اس سلسلے میں چینی تجربہ کو پاکستان میں دہرانے پر زور دیااور حکومت سے اپیل کی کہ حکومتی سطح پر اس سلسلے میں جلد از جلد چین سے رابطہ کیا جائے۔ نیز انہوں نے پاک چین چیمبرکے تمام اراکین سے اپیل کی کہ وہ کورونا سے بچنے کیلئے حکومت کی طرف سے تجویز کردہ اقدامات پر سختی سے عمل کریں۔

مزید : کامرس