کرونا، کھیلوں کی سرگرمیاں معطل ہونے سے کھلاڑی پریشان

کرونا، کھیلوں کی سرگرمیاں معطل ہونے سے کھلاڑی پریشان

  



لاہور(افضل افتخار)کرونا وائرس نے پوری دنیامیں کھیلوں کی سرگرمیاں معطل کرکے رکھ دی ہیں پاکستان میں بھی ہر طرح کے کھیل پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس سے مقامی کھلاڑی شدید پریشانی کا شکارہیں ان کا کہنا ہے کہ ملک میں پہلے ہی کھیلوں کو زیادہ سے زیادہ فروغ دینے کی ضرورت ہے مگر ایسی صورتحال میں اب کلبوں کی سطح پر بھی کھیلوں کی بندش سے کھیلوں کے مستقبل پر سوالیہ نشان لگ گیا ہے اس حوالے سے کرکٹ کلبوں کے کھلاڑیوں نعمان،ساجد،عابد،ہارون،عامر،نوید،ثاقب،بابر اور عمران نے کہا کہ کلب کرکٹ بھی بند ہوگئی ہے اس حوالے سے حکومت کو سنجیدگی سے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ملکی حالات میں بہتری آسکے اور کھیلوں کی سر گرمیاں دوبارہ شروع ہوسکیں اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ہاکی سے منسلک کھلاڑیوں ریحان،عادل،سمیر،شرجیل،عبید،عاقل،حمید،مامون،دلبر اور حارث نے کہا کہ ملک میں پہلے ہی ہاکی کا کھیل تنزلی کا شکار ہے اور ترقی کے لئے اقدامات کی ضرورت ہے اب ایسی صورتحال سے مزید مشکلات پید ا ہوگئیں ہیں اور اب یہ نہیں معلوم کہ کب تک یہ صورتحال برقرار رہے گی ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس صورتحال کا ڈٹ کرمقابلہ کیا جائے ہم حکومت کے ساتھ ہیں فٹ بال،ٹینس،باکسنگ اور فن پہلوانی سے وابستہ افراد نے بھی اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں پہلے ہی کھیلوں کی سر گرمیاں اس رفتار سے ترقی نہیں کررہی تھیں جس کی ضرورت تھی اب صورتحال مزید خراب ہوگئی ہے اس سے نکلنے کی ضرورت ہے تاکہ کھیلوں کے میدان دوبارہ آباد ہوسکیں اس کے لئے ہم سب کومل کریک جان ہوکر مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے ایسے حالات میں مجبوری کے تحت کھیلوں کی سر گرمیاں معطل کی جارہی ہیں مگر اس کے لئے مستقبل میں بہتر حکمت عملی تیار کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اتنے عرصہ تک کھیلوں کی سر گرمیاں نہ ہو نے سے خلا پیدا ہوگا جس کا مستقبل میں پورا کرنا بہت ضروری ہے ہم اس مشکل وقت میں حکومت کے ساتھ ہیں۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی