مہمند، کرونا سے متاثر ہ افراد کیلئے 70بستروں پر مشتمل آئسولیشن سنٹر قائم

مہمند، کرونا سے متاثر ہ افراد کیلئے 70بستروں پر مشتمل آئسولیشن سنٹر قائم

  



مہمند(نمائندہ پاکستان)مہمند، مہمند محکمہ صحت نے کرونا وائرس پھیلنے کی خطرے کے پیش نظر مختلف ہسپتالوں میں 70 بیڈوں پر مشتمل آئسولیشن سنٹرزقائم کردیئے گئے، ہیڈکوارٹر غلنئی ہسپتال میں 30، مامدگٹ ہسپتال میں 30، اور لوئر مہمند سب ڈویژن کے آر ایچ سی میں 10بیڈز رکھے گئے ہیں، علاقے کے عوام کو شادی بیاہ، نماز جمعہ، اجتماعات اور پرہجوم مقامات سے دور رہنے کی ہدایات جاری کردیئے۔ اس سلسلے میں جمعرات کے روز ہیڈکوارٹر غلنئی ہسپتال میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر محمد حیات نے کرونا وائر س سے متعلق بریفنگ کے دوران میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ صحت مہمند نے کرونا وائرس کے خطرے کی پیش نظر قبل ازوقت ہنگامی اقدامات اٹھالئے گئے ہیں۔ اس ضمن میں ڈی ایچ او محمد حیات نے بتایا کہ ضلع مہمند کے مختلف علاقوں ہیڈکوارٹر غلنئی اور تحصیل صافی کے مامدگٹ ہسپتال میں تیس تیس جبکہ لوئر مہمند کے یکہ غنڈ آر ایچ سی میں 10بیڈز پر مشتمل آئسولیشن سنٹرز قائم کردیئے گئے ہیں۔ انہوں نے علاقے کے عوام کے نام خصوصی پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ ضلع مہمند میں شادی بیاہ، نماز جمعہ، پرہجوم مقامات، بازاروں، ہوٹلوں، ایک میٹر تک فاصلہ رکھنے اور مصافحہ کرنے سے بھی گریز کرنے کا مشورہ دیاہے تاکہ ممکنہ احتیاطی تدابیرکی وجہ سے کرونا وائرس کا مرض علاقے میں پھیل نہ سکیں۔انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس سے عام طورپر بوڑھے افراد، دس سال سے کم عمر بچے، شوگر، بلڈ پریشر، سانس میں دشواری اور دمہ کے مریض بہت جلد متاثر ہوتے ہیں جس سے موت بھی واقع ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقامی ضلعی انتظامیہ نے ایف ڈی ایم اے کے اعلیٰ حکام سے مختلف اشیاء کی ڈیمانڈ کرلی ہے اور کرونا وائرس سے متعلق تمام ضروری سامان ایک ہفتہ میں مل جائیگی اور ان کو مذکورہ سنٹروں تک بھیج دیا جائے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر