جندول،لوئر دیر میں کورونا وائرس کا شدید خوف وہراس

جندول،لوئر دیر میں کورونا وائرس کا شدید خوف وہراس

  



جندول(نمائندہ پاکستان)سب ڈویژن جندول سمیت ضلع لوئر دیرمیں کورونا وئرس کا شدیدخوف ویراس وقت شروع ہوئے جب جندول کے بازاروں میں کروناوئرس سے نمٹنے کا سرکاری علان سن کر علاقائی لوگ سوچوں میں گم سوم ہوگئی،ضلع بھر کے لوگ شدید خوف ویراس میں مبتلا ہوگیا،مقامی لوگوں نے جندول ہسپتالوں میں سہولیت نا ہونا قابل تشویش قرار دیا۔انہونے کہا کہ جندول کے ہسپتالوں زکام کا علاج معالج تک دستیاب نہیں توکرونا وئرس کا علاج کیسا کیا جائے گا۔جس کے بعدجگہ جگہ مسجدوں میں اجتماعی دعا کیا گیاعلاقائی علماء کرام نے کورونا وئرس عذاب الہئی قرا دے دیا،مقامی لوگ اور علماء کرام نے ملک بھر سے استغفار کہنے کا مطالبہ کردیا۔جندول سب ڈویژن میں شدید خوف ویراس اس وقت پیش ایا جب وزیر علی محمد خان کے ھدایات پر عمل درامد شروع ہوکر ڈپٹی کمشنر لوئر دیر کے احکا مات کے مطابق جندول کے چھوٹے بڑے بازاروں میں اسسٹنٹ کمشنر طارق حسین نے سرکاری گاڑی پر لوڈ سپکرکے زرئع سے اعلان کردیا انہونے اپنے علان میں عوام سے مطالبہ کیا کہ غیرضروری پر ہجوم مقامات جانے سے گریز کریں،اپنے اشیاء خورد نوش کے دوکانیں دن 10 بجے کل کر شام 7 بجے بند کرنا ہوگا،حجامت اور بیوٹی پارلرکے دوکانیں اگلہ 15 تاریخ تک بند کریں انہونے ہوٹل مالکان کو بھی خبردار کیا کہ ہوٹل میں ہجوم پرسخت پابندی لگالیا گیا ہے اسلئے ااحتیات کریں انہونے تمام لوگوں سے صوبائی حکومت کے احکامات پر عمل کرنے کا حکم دے دیا جس کے خلاف ورزی پر سخت کاروائی عمل میں لائے جاگی جس میں 2 لاکھ روپے جرمانہ اور جھیل بھی شامل ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر