ایک کمرے میں چارمریضوں کو رکھیں گے توکورونا پر کیسے کنٹرول پائیں گے ،لاہورہائیکورٹ

ایک کمرے میں چارمریضوں کو رکھیں گے توکورونا پر کیسے کنٹرول پائیں گے ...
ایک کمرے میں چارمریضوں کو رکھیں گے توکورونا پر کیسے کنٹرول پائیں گے ،لاہورہائیکورٹ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا وائرس سے متعلق درخواستوں پر سماعت کے دوران لاہورہائیکورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ ہم حکومت کیلئے کوئی مشکلات پیدانہیں کرناچاہتے،اللہ کرے دنیا اور ہم بھی کورونا وائرس سے محفوظ رہیں ۔

چیف جسٹس ہائیکورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ ایک کمرے میں چارمریضوں کو رکھیں گے توکورونا پر کیسے کنٹرول پائیں گے ،دیگر ممالک میں ایک مریض کوایک کمرے میں رکھا جارہاہے ،جب تک انٹرنیشنل لیو ل کی سہولیات مہیا نہیں کریں گے رزلٹ بہتر نہیں آئیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ میں کورونا وائرس سے متعلق درخواستوں پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ قاسم خان کی سربراہی میں 4 رکنی بنچ نے سماعت کی،جسٹس عائشہ اے ملک،جسٹس ساجد محمود سیٹھی اور جسٹس شاہد جمیل خان بنچ میں شامل ہیں۔

سرکاری وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ملتان میں انڈسٹریل سٹیٹ میں قرنطینہ سنٹربنایا گیا ہے ،وہاں 3 ہزار کمرے ہیں اورانہیں ہسپتال میں تبدیل کیاگیا ہے،نشتر ہسپتال کے عملے کی شفٹوں میں ڈیوٹیاں لگا ئی گئی ہیں ۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ طبی عملے کیلئے ایس او پیز کیا بنائے گئے ہیں ؟،2 کٹس 10 کروڑ عوام کیلئے ناکافی ہیں ،ملتان اوربہاولپور میں آپ نے ایک مشین دینی ہے ،گورنمنٹ نے ہسپتالوں کو ابھی تک کورونا ٹیسٹ کیلئے آلات ہی نہیں مہیا کئے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہم حکومت کیلئے کوئی مشکلات پیدانہیں کرناچاہتے،اللہ کرے دنیا اورہم بھی کورونا وائرس سے محفوظ رہیں ،ایک کمرے میں چارمریضوں کو رکھیں گے توکورونا پر کیسے کنٹرول پائیں گے ۔

چیف جسٹس قاسم خان نے کہا کہ دیگر ممالک میں ایک مریض کوایک کمرے میں رکھا جارہاہے ،جب تک انٹرنیشنل لیو ل کی سہولیات مہیا نہیں کریں گے رزلٹ بہتر نہیں آئیں گے ۔لارجر بنچ نے حکومت پنجاب کے اقدامات سے متعلق تفصیلات مانگ لیں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور