وزیر اعظم عمران خان کے بعد شاہ محمود قریشی بھی ایران کے حق میں بول پڑے،دنیا سے بڑا مطالبہ کر دیا

وزیر اعظم عمران خان کے بعد شاہ محمود قریشی بھی ایران کے حق میں بول پڑے،دنیا ...
وزیر اعظم عمران خان کے بعد شاہ محمود قریشی بھی ایران کے حق میں بول پڑے،دنیا سے بڑا مطالبہ کر دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نوول کرونا وائرس کی وبا سے بہتر طور پر نمٹنے میں مدد کے لئے ایران سے اقتصادی پابندیاں اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے،ایران نوول کرونا وائرس کی وبا کے شدید متاثرہ ممالک میں شامل ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وہ ایران سے پابندیاں اٹھانے کے وزیراعظم عمران خان کے مطالبے کو دہراتے ہیں،کرونا وائرس سے ایران میں اموات تیزی سے ہورہی ہیں،ہم پابندیوں کو فوری طور اٹھانے کی درخواست کرتے ہیں۔وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ ایک انسانی مسئلہ ہے،ہمارے ہزاروں پاکستانی زائرین بھی ایران میں پھنسے ہوئے ہیں اور وہ بھی واپس آئیں گے۔دوسری طرف شاہ محمود  قریشی نے ٹوئٹ پر کہا کہ ایسے وقت جب عالمی برادری نوول کرونا وائرس کے خلاف مصروف جنگ ہے عالمی رہنماؤں کے لئے وقت ہے کہ یکجہتی کا مظاہرہ کریں اور ایران سے پابندیوں کو ہٹائیں۔انہوں نے ٹوئٹ کیا کہ پوری عالمی برادری اس غیر متوقع عالمی وبا سے لڑ رہی ہے ایسے بڑے چیلینج اور مشکل کے وقت میں بحیثیت رہنماوں کے ہمیں زیادہ سے زیادہ ہمدردی دکھانی چاہیئے،ایران کے خلاف عائد پابندیوں کو لازمی طور سے ہٹانا چاہیئے تاکہ خطرے کے اس وقت میں وہ قیمتی انسانی جانوں کو بچانے کے لئے اپنے وسائل کو استعمال کرسکے۔

نوول کرونا وائرس کےخلاف جنگ میں پاکستان میں اٹھائے گئے حفاظتی اقدامات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ صوبہ پنجاب کے شہر ملتان میں ایک بڑا قرنطینہ مرکز قائم کیاگیا ہے جہاں ایران سے واپس آنے والے زائرین کو ایک مخصوص وقت تک رکھا جائے گا، قرنطینہ مرکز میں 3ہزار کمرے ہیں اور ایران سے واپس آنے والے1ہزار247 زائرین کو اس قرنطینہ سینٹر میں منتقل کیاگیا ہے جہاں ہر ایک شخص کو علیحدہ کمرے میں رکھاگیا ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان  بھی مسلسل دوسری مرتبہ عالمی دنیا سے ایران پر لگائی جانے والی پابندیوں کو ہٹانے کا مطالبہ کر چکے ہیں۔

مزید : قومی