حکومت سندھ نے کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر صوبے میں تمام ترقیاتی فنڈز منجمد کردئیے

حکومت سندھ نے کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر صوبے میں تمام ترقیاتی فنڈز ...
حکومت سندھ نے کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر صوبے میں تمام ترقیاتی فنڈز منجمد کردئیے

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) حکومت سندھ نے کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر صوبے میں تمام ترقیاتی فنڈز منجمد کردئیے ہیں اورترقیاتی بجٹ کا اجرا روک دیاگیا جبکہ ایم ایم بی ایس پاس ڈاکٹرز کو چھ ماہ کے لیے سرکاری ملازمت کی پیشکش کی گئی ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق محکمہ خزانہ سندھ کے زرائع کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس پر قابو پانے کے لیے بڑے فنڈز درکارہیں، اسی پہلو کے پیش نظرسندھ حکومت نے ترقیاتی بجٹ کو منجمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔رواں مالی سال میں شامل تمام نئی،جاری ترقیاتی منصوبوں کے لیے فنڈنگ روک دی گئی ہے اورتیسری سہ ماہی کے لیے ترقیاتی بجٹ جاری نہیں کیاجائے گا۔مالی سال 20-2019میں سندھ کے بجٹ میں 208ارب روپے کی 2705سکیمز شامل تھیں۔وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی ہدایت پرکورونا وائرس کے تدارک کے لیے طویل اقدامات پر کام شروع کردیا گیا ہے،سندھ میں مرد وخواتین ڈاکٹرز کی فوری بھرتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ہاوس جاب مکمل کرنے اور پی ایم ڈی سی سے سندیافتہ ڈاکٹرز کو بطور میڈیکل آفیسر بھرتی کیاجائیگا،ڈاکٹرز کی بھرتیاں چھ ماہ کے کنٹریکٹ پر ہونگی،نئے بھرتی ہونیوالے ڈاکٹرز سے31مارچ تک درخواستیں طلب کرلی گئی ہیں۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی