عدم ادائیگی کی وجہ سے پاور سیکٹر کے بعد پی ایس او نے وزیراعظم سیکریٹریٹ کو پٹرول کی سپلائی بند کردی

عدم ادائیگی کی وجہ سے پاور سیکٹر کے بعد پی ایس او نے وزیراعظم سیکریٹریٹ کو ...
عدم ادائیگی کی وجہ سے پاور سیکٹر کے بعد پی ایس او نے وزیراعظم سیکریٹریٹ کو پٹرول کی سپلائی بند کردی

  


 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) عدم ادائیگی کی وجہ سے پاور سیکٹر کے بعد پاکستان سٹیٹ آئل (پی ایس او ) نے وزیراعظم سیکریٹریٹ کو پٹرول دینا بند کردیاہے جس کی وجہ سے عملے اور افسران کی گاڑیاں کھڑی ہوگئی ہیں ۔ ذرائع کے مطابق گذشتہ تقریباً دو ماہ سے پی ایس او کو وزیراعظم سیکریٹریٹ کی طرف سے ادائیگی نہیں کی گئی اور سیکریٹریٹ کے ذمے 17لاکھ روپے واجب الادا ہیں جو رواں ماہ کے آخرتک دوگنا ہوجائیں گے ۔ پی ایس او نے عدم ادائیگی کی وجہ سے تمام کارڈ ز اور رسیدوں پر وزیراعظم سیکریٹریٹ کو پٹرول دینا بند کردیاہے جس کی وجہ سے عملے اور افسران کو شدید مشکلات کا سامناہے ۔ وزیراعظم سیکریٹریٹ کے حکام نے عدم ادائیگی کی تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ وزیراعظم ہاﺅس کو جلد درخواست کریں گے کہ ادائیگی کردی جائے ۔ نجی چینل کے مطابق پہلے بھی وزارت خزانہ کی طرف سے عدم ادائیگیوں کی وجہ سے پی ایس او پاور سیکٹر کو کم تیل مہیا کررہاہے جس کی وجہ سے بجلی کی پیداوار پوری نہیں ہورہی اور اُس کے نتیجے میں زیادہ لوڈشیڈنگ ہورہی ہے ۔ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کاکہناہے کہ جان بوجھ کر منصوبہ کے تحت زیادہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے تاکہ نئی حکومت کے آنے کے ساتھ ہی دعویٰ کیاجاسکے کہ لوڈشیڈنگ پر قابوپالیاگیاہے ۔ 

مزید : بزنس /Headlines


loading...