طالبان ہمیں اپنا باپ سمجھتے ہیں :سمیع الحق

طالبان ہمیں اپنا باپ سمجھتے ہیں :سمیع الحق
طالبان ہمیں اپنا باپ سمجھتے ہیں :سمیع الحق

  


پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے کہا ہے کہ ملک میں قیام امن کیلئے میاں نواز شریف کا اہم پیغام ملا ہے اور وہ ہرممکن تعاون کریں گے لیکن اگر بیرونی دباﺅ قبول کیا گیا تو انجام پچھلی حکومتوں جیسا ہوگا، میاں صاحب نے ان حالات میں گہری دلچسپی ظاہر کی ہے، بڑی اہم شخصیت کے ذریعے صبح ہی ان کا تفصیلی پیغام ملا ہے اوروہ چاہتے ہیں ہم ان معاملات میں ان کی مدد کریں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو ہماری اہمیت معلوم ہے الحمد للہ آج افغانستان سارا دارالعلوم حقانیہ کا مرہون منت ہے، جہاد میں شامل 95 فیصد طالبان اس ادارے کے تعلیم یافتہ لوگ ہیں اور سب مجھے اپنا باپ سمجھتے ہیں ان کو بھی یہ احساس ہے میں ان سے بھی کہوں گا ذرا ہمت سے کام لیں اور بیرونی ایجنڈہ اگر کوئی ہم پر مسلط کرنا چاہے تو خدارا ان کی باتوں میں نہ آئیں ورنہ وہی انجام ہوگا جو پچھلی حکومتوں کا ہوا، وہ اللہ کے نام سے میدان میں نکلیں، انشاءاللہ عمران خان کی صوبائی حکومت بھی ان کے ساتھ ہوگی، ہم کچھ مانگے بغیر ، اقتدار میں شامل ہوئے بغیر جہاں ضرورت سمجھتے ہیں ساتھ دیتے ہیں ، میری اپیل ہوگی کہ اس آگ کو بجھانے میں پوری توجہ مرکوز فرمائیں۔ سمیع الحق کا کہنا ہے کہ جس طرح پرویز خان نے کہا کہ ہماری روایت میں مذاکرات اور جرگے کی بڑی اہمیت ہوتی ہے، اگربندوق سے دبا سکتے تو 5 سال میں نہیں 13 سال میں دبا چکے ہوتے، بندوق سے معاملہ حل نہیں ہوگا، حالات یہاں ٹھیک ہوں گے تو امریکا جلد بوریا بستر لپیٹے گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...