شبرزیدی کو چیئرمین ایف بی آر بننے کے بعد کس نے سمگل شدہ موبائل دینے کی کوشش کی؟ آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی 

شبرزیدی کو چیئرمین ایف بی آر بننے کے بعد کس نے سمگل شدہ موبائل دینے کی کوشش ...
شبرزیدی کو چیئرمین ایف بی آر بننے کے بعد کس نے سمگل شدہ موبائل دینے کی کوشش کی؟ آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی 

  


کراچی (ویب ڈیسک) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے چیئرمین شبر زیدی نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں بھی ایک سمگل فون دینے کی کوشش کی گئی ،کراچی چیمبر آف کامرس میں تاجروں سے گفتگو کے دوران شبر زیدی نے بتایا کہ ’میرا موبائل فون ٹوٹ گیا تو مجھے کہا گیا کہ آپ کا فون دبئی سے دو حصوں میں آئے گا، کھیپیا لے کر آئے گا تو ہم آپ کو دے دیں گے ، میں نے اپنے منیجر کو بولا کہ نیا لا دو تو اسے کہا گیا کہ آپ والا ماڈل دستیاب نہیں، کل شام کی فلائیٹ سے میرا کھیپیا پہنچے گا، وہ آپ کو دے دے گا‘۔ 

چیمبر کے نمائندے نے چیئرمین ایف بی آر سے مطالبہ کیا کہ ’پورا سکرپٹ چاہیے، ون وے سکرپٹ نہیں چاہیے، اگر بزنس مین چور ہے تو اس کو لٹکا دو ، مگر ثابت کرنا ہوگا،  یہی چیز  ایف بی آر کے اس آفیسر کے ساتھ بھی ہونی چاہیے اگر چور ہے تو، چاہے 85 فیصد بزنس مین لے گیا ، 15 فیصد اگر وہ لے گیا تو دونوں کو لٹکا دو، سمگل چیزوں کو بیچنا چوری ہے تو پکڑیں۔ 

اس پر چیئرمین ایف بی آر کاکہناتھاکہ ’آپ سب جانتے ہیں کہ مارکیٹیں درآمد شدہ چیزوں سے بھری پڑی ہیں لیکن وہ سب درآمد شدہ نہیں، جو سمگل چیزیں بیچ رہا ہے ، وہ بھی تو چور ہے ، کہیں تو شام کو ہی ریڈ ڈلوا دوں ،  مارکیٹ میں ریڈ کرکے سامان اٹھا لیتا ہوں لیکن وعدہ کرنا  ہوگا کہ کراچی چیمبر ہڑتال پر نہیں جائے گا۔ انہوں نے کا کہ ’میرے افسر کرپٹ ہیں تو انہیں بھی نکال دیں گے‘۔

مزید : ڈیلی بائیٹس