آئینی ماہربابر ستارنے حکومت کی اصل پریشانی کی وجہ بیان کردی

آئینی ماہربابر ستارنے حکومت کی اصل پریشانی کی وجہ بیان کردی
آئینی ماہربابر ستارنے حکومت کی اصل پریشانی کی وجہ بیان کردی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) آئینی ماہر بابر ستار نے کہاہے کہ حکومت اگر پریشان ہے تو اپنی کارکردگی نہ ہونے کی وجہ سے ، اگر حکومت معالات چلانا سکی تو پھر اس کے خلاف تحریک چل سکتی ہے۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے بابر ستار نے کہاکہ جب مخالف ٹیم میں میدان میں کھیلنے کیلئے آجائے پریشانی تو ہوتی ہے لیکن حکومت کو گرانے کے حالات نہیں ہیں کہ حکومت کو گرادیا جائے ، لوگ پریشان ضرورہیں مہنگائی کے حوالے سے ، حکومت اگرحالات کو کنٹرول نہ کرسکی تو پھر تحریک چل سکتی ہے ، اب حکومت اگر پریشان ہے تو اپنی کارکردگی نہ ہونے کی وجہ سے ، اگر حکومت معالات چلانا سکی تو پھر اس کے خلاف تحریک چل سکتی ہے لیکن ابھی الیکشن کے ایک سال بعد ہی حکومت مخالف تحریک چلنے کے امکانات نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ چیئر مین نیب نے اگر ایک صحافی کو انٹرویو دیا ہے تو یہ بات کیسے کہہ رہے ہیں کہ وہ جلدی جیل میں ہونگے ، ان کی اپنی شہرت ایک نوکری پیشہ جج والی ہے جب یہ جج تھے اور جب ججوں کی تحریک چلی تو پھر بھی جسٹس (ر) جاوید اقبال نے حکومت کی نوکری کی تو ایک نوکری پیشہ کیسے کسی کو این آر او دے سکتا ہے ۔

مزید : قومی