مظہر عباس نے افطار ڈنر میں اپوزیشن کی احتجاجی تحریک کے حوالے سے پیش رفت کو منفی قرار دیدیا

مظہر عباس نے افطار ڈنر میں اپوزیشن کی احتجاجی تحریک کے حوالے سے پیش رفت کو ...
مظہر عباس نے افطار ڈنر میں اپوزیشن کی احتجاجی تحریک کے حوالے سے پیش رفت کو منفی قرار دیدیا

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ افطا ر ڈنر میں ا پوزیشن کی نہ اتحاد کے حوالے کوئی بات آگے بڑھی ہے اورنہ تحریک کے حوالے سے کوئی بات آگے بڑھے ہے ، اس سے حکومت کوپریشان تو نہیں ہونا چاہئے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ “ میں گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس نے کہا کہ اپوزیشن کی نہ اتحاد کے حوالے کوئی بات آگے بڑھی ہے اورنہ تحریک کے حوالے سے کوئی بات آگے بڑھی ہے ، اس سے حکومت کوپریشان تو نہیں ہونا چاہئے لیکن جس طرح وزراءکے بیانات آئے ہیں ، اس سے پتہ چلتاہے کہ اپوزیشن کا مقصد پورا ہوگیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی طرف سے عید کے بعد کوئی تحریک چلتی نظر نہیں آرہی البتہ حکومت اس تحریک کوچلاتی نظر آرہی ہے ۔

مظہر عباس نے کہا کہ اگر جاوید چودھری اپنی بات پر کھڑے ہیں تو پھر چیئر مین نیب پر ایک سنجیدہ سوال آجاتاہے ، اگر یہ باتیں جو جاوید چودھری نے لکھی ہیں درست ہیں تو پھر چیئر مین نیب کی ساکھ بری طرح متاثر ہوئی ہے ، چیئر مین نیب کو یہ وضاحت کرنا بہت ضروری تھا کہ ان کی جانب سے یہ باتیں کی گئی تھیں یا نہیں کی گئی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ جب کسی کالم نویس کو انٹرویودیا جاتاہے تو وہ آف دی ریکارڈ نہیں ہوتا ، وہ انٹرویو چھپتا ہے ، اس لئے پریس کانفرنس میں چیئر مین نیب کو اس انٹرویو کی وضاحت کرنی چاہئے تھی ۔

مزید : قومی