شوکت خانم ہسپتال میں کینسر کے علاج کیلئے جدید ٹیکنالوجی کا آغاز

شوکت خانم ہسپتال میں کینسر کے علاج کیلئے جدید ٹیکنالوجی کا آغاز

  

لاہور(پ ر)شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال اور ریسرچ سنٹرمیں کینسر کے علاج کی ایک جدید ترین ٹیکنالوجی سٹئیرو ٹیکٹک ریڈیو تھراپی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ اس ٹیکنالوجی کے ساتھ اب شوکت خانم لاہور میں سٹئیرو ٹیکٹک ریڈیو سرجری اور سٹئیرو ٹیکٹک باڈی تھراپی کی فراہمی ممکن ہوگئی ہے۔یہ ریڈی ایشن کی ایک خاص قسم ہے جس کے ذریعے ٹیومر کو پھیلاؤ سے روک کر اسی جگہ پر مکمل طور پر ختم کرنا ممکن ہے۔ یہ ٹیکنالوجی مریضوں کے لیے اس لیے بھی اہم ہے کہ عام روٹین میں مریضوں کو ریڈی ایشن کے لیے پانچ سے چھ ہفتے تک مسلسل ہسپتال آنا پڑتا ہے جو کہ ان کے لیے ایک مشکل کام ہوتا ہے لیکن سٹئیرو ٹیکٹک ٹیکنالوجی میں زیادہ سے زیادہ پانچ دفعہ میں پہلے سے زیادہ بہتر نتائج حاصل کیے جا سکتے ہیں۔یعنی وہ مریض جن کو پہلے کئی ہفتوں تک ریڈی ایشن کے لیے آنا پڑتا تھا اب وہ دو سے تین دن میں ان کا یہ عمل مکمل ہو جائے گا۔ شعبہ کلینکل اینڈ ریڈی ایشن کی سربراہ ڈاکٹر تابندہ صدف کا کہنا تھا کہ یہ ٹیکنالوجی ایسے مریضوں کے لیے بہت اہم ہے۔

جن کا کینسر ان کے دماغ، پھیپھڑوں یا جگر میں پہنچ چکا ہو۔پہلے ایسے مریضوں کے لیے علاج کے بہت محدود طریقے رہ جاتے تھے اور انہیں صرف بیماری کو کنٹرول کرنے کی ادویات دی جاتی تھیں کیونکہ اس کو مکمل طور پر ختم کرنا ممکن نہیں ہو تا تھا لیکن اب ایسے مریضوں کے پاس بھی ایک موقع ہو گا کہ ان کی بیماری مکمل طور پر ختم ہو جائے اور وہ کینسر سے پاک صحت مند زندگی گزار سکیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -