شب قدر کی عبادات

شب قدر کی عبادات

  

رشید احمد رضوی

ارشاد باری تعالیٰ ہے! ترجمہ ”بیشک ہم نے اس(قرآن)کوشب قدر میں اتارا ہے“ سورۃ القدر

رمضان المبارک برکتوں،رحمتوں اور جہنم سے آزادی کا ماہ مبارک ہے تو یہ قرآن پا ک کے نزول کا مہینہ بھی ہے قرآن پا ک میں اللہ پاک نے سورہ قدر میں ایک عظیم رات کا ذکر فرمایا ہے۔رمضان المبارک کے آ خری عشرہ کی طاق راتوں میں سے ایک رات شب قدر کہلاتی ہے جو بہت ہی خیرو برکت والی ہے۔ قرآن پاک میں اس رات کو ہزار مہینوں سے افضل بتایا گیا ہے۔ خوش نصیب ہے وہ شخص جس کو اس رات کی عبادت نصیب ہو جائے جو شخص یہ ایک رات عبادت میں گزار دے گویا اس نے تراسی سال اور چار مہینے سے زیادہ کا عرصہ عبادت میں گزار دیا اور یہ بھی صحیح معلوم نہیں کہ اس ایک رات کی عبادت ہزار مہینے سے کتنے مہینے زیادہ افضل ہے۔ ذیل میں لیلۃ القدر کی فضیلت میں چند احادیث نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا ترجمہ دیا جارہا ہے۔

٭……ام المومنین حضرت سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا نے نبی کریم صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم کا یہ ارشاد نقل کیا ہے کہ لیلۃ القدر کو رمضان کے آخری عشرہ کی طاق راتوں میں تلاش کرو۔ (بخاری۔ مشکوٰۃ)

٭…… حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ جو شخص لیلۃ القدر میں ایمان کے ساتھ اور ثواب کی نیت سے (عبادت کے لئے) کھڑا ہو اس کے پچھلے تمام گناہ معاف کر دیئے جاتے ہیں۔ (بخاری و مسلم)

٭…… حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ کہتے ہیں کہ ایک مرتبہ رمضان المبارک کا مہینہ آیا تو حضور صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے فرمایا کہ تمہارے اوپر ایک مہینہ آرہا ہے جو شخص اس رات سے محروم رہ گیا گویا ساری ہی خیر سے محروم رہ گیا اور اس کی بھلائی سے محروم نہیں رہتا مگر وہ شخص جو حقیقتاً محروم ہی ہے۔ (ابن ماجہ۔ مشکوٰۃ)

دعاوٗں کی قبولیت۔ شب قدر میں ایک گھڑی ایسی ہے کہ جو دعا مانگی جائے قبول ہوتی ہے۔ ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں میں نے عرض کی یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اگر میں شب قدر کو پالوں تو کون سی دعا مانگوں تو پیارے آقا صلی اللہ علیہ و سلم نے مندرجہ ذیل دعا تعلیم فرمائی۔

شب قدر کی دعا: اَللّھْمَّ اِنَّکَ عَفْوّ تْحِبّْ العَفوَ فَاعفْ عَنِّی یَا غَفْورْ یَا غَفْورْ یَا غَفْورْ۔ (ابن ماجہ،ترمذی)

ستائیسویں شب…… ستائیسویں شب کو بارہ رکعت نماز نفل تین سلام سے پڑھے اور ہر رکعت میں بعد سورہئ فاتحہ کے ایک ایک بار سورہئ قدر اور سورہئ اخلاص پندرہ پندرہ مرتبہ پڑھے۔ بعد سلام کے ستر بار استغفار پڑھے۔ اس نماز کے پڑھنے والے کو انبیاء کی عبادت کا ثواب عطا ہوگا۔ (ان شاء اللہ تعالیٰ)…… ستائیسویں شب کو دو رکعت نماز پڑھے۔ ہر رکعت میں سورہئ فاتحہ کے بعد سورہئ قدر تین تین دفعہ سورہئ اخلاص ستائیس مرتبہ پڑھ کر گناہوں کی مغفرت طلب کرے۔ ان شاء اللہ تعالیٰ اس کے پچھلے تمام گناہ معاف ہوں گے۔ ستائیسویں شب کو چار رکعت نفل دو سلام سے پڑھے اور ہر رکعت میں بعد سورہئ فاتحہ کے سورہئ تکاثر ایک ایک بار اور سورہئ اخلاص تین تین بار پڑھے۔ اس نماز کے پڑھنے والے پر سختی موت آسان ہو جاتی ہے اور رحمت خداوندی سے بعید نہیں کہ عذاب قبر بھی معاف ہو جائے۔ ستائیسویں شب کو دو رکعت نماز نفل پڑھے اور ہر رکعت میں سورہئ فاتحہ کے بعد سورہئ اخلاص سات سات بار پڑھے بعد سلام کے ستر بار مندرجہ ذیل تسبیح پڑھے۔استغفر اللہ العظیم الذی لا الہ الاھو الحی القیوم واتوب الیہ

اس نماز کو پڑھنے والا اپنے مصلیٰ سے اُٹھنے بھی نہ پائے گا کہ اللہ تعالیٰ اس کے اور اس کے والدین کے گناہ معاف فرما دے گا۔ (انشاء اللہ تعالیٰ)…… ستائیسویں شب کو دو رکعت نماز نفل پڑھے اور ہر رکعت میں بعد سورہئ فاتحہ سورہئ الم نشرح ایک ایک بار اور سورہئ اخلاص تین تین بار پڑھے بعد سلام ستائیس بار سورہئ قدر پڑھے۔…… ستائیسویں شب کو چار رکعت نماز پڑھے اور ہر رکعت میں بعد سورہئ فاتحہ تین تین بار سورہئ قدر اور پچاس پچاس بار سورہئ اخلاص پڑھے اور بعد سلام سجدے میں سر رکھ کر ستر مرتبہ یہ کلمات پڑھے۔سبحان اللہ والحمد للہ ولا الہ الا اللہ واللہ اکبراس کے بعد جو بھی دنیاوی یادینی حاجت طلب کرے وہ ان شاء اللہ تعالیٰ بار گاہِ ایزدی میں مقبول ہوگی…… ستائیسویں شب کو سورہئ ملک سات مرتبہ پڑھنا مغفرت کے لئے اور گناہوں کی بخشش کے لئے بہت افضل درجہ رکھتی ہے۔

انتیسویں شب…… انتیسویں شب کو چار رکعت نماز دو سلام سے پڑھے اور ہر رکعت میں سورہئ فاتحہ کے بعد ایک ایک بار سورہئ قدر اور تین تین بار سورہئ اخلاص پڑھے۔ سلام کے بعد ستر بار سورہئ الم نشرح پڑھے۔ یہ نماز ایمان کامل حاصل کرنے کے لئے بہت افضل ہے۔اس نماز کے پڑھنے والے کو اللہ تعالیٰ اس دنیا سے مکمل ایمان کے ساتھ اُٹھائے گا۔ (ان شاء اللہ تعالیٰ)…… ماہِ رمضان المبارک کی انتیسویں شب کو چار رکعت نماز نفل دو سلام سے پڑھے اور ہر رکعت میں سورہئ فاتحہ کے بعد ایک ایک بار سورہئ قدر اور سورہئ اخلاص پانچ پانچ بار پڑھے۔ بعد سلام کے ایک سو مرتبہ درود شریف پڑھے۔ اس نماز کے پڑھنے والے کو ان شاء اللہ تعالیٰ بارگاہ خداوندی سے بخشش اور مغفرت عطا کی جائے گی…… ماہ رمضان المبارک کی انتیسویں شب کو سات مرتبہ سورہئ واقعہ پڑھے ان شاء اللہ تعالیٰ ترقی رزق کے لئے افضل ہے۔ ٭٭٭

مزید :

ایڈیشن 1 -