جام پور: ہلاکت کیس، ایس ایچ او سمیت 5ملازمین پر قتل کامقدمہ

جام پور: ہلاکت کیس، ایس ایچ او سمیت 5ملازمین پر قتل کامقدمہ

  

راجن پور،جام پور(نامہ نگار)ریجنل پولیس افسر ڈیرہ غازی خان کے حکم پر ایس پی انوسٹی گیشن اورتین ڈی ایس پیز پر مشتمل انکوری رپورٹ کی روشنی میں جام پور سٹی تھانہ کی حوالات میں ملزم کی ہلاکت پر ایس ایچ او سٹی اختر خان ایک ایس ائی سمیت تین کانسٹیبلوں پر قتل اور چاردیواری کا تقد س پامال کرنے اوردیگر دفعات کی روشنی میں مقدمہ درج کرلیاگیا۔ نور حسین(بقیہ نمبر57صفحہ6پر)

ایس ائی کو ایس ایچ او سٹی کا عارضی چارج دیدیا گیا۔ ملزمان نے عبوری ضمانتوں کے لیے عدالت سے رجوع کر لیا۔ تفصیل کے مطابق گزشتہ ہفتہ کو پولیس تھانہ سٹی کے ایس ایچ او اختر اور ایس ایس ائی طالب حسین۔ کانسٹیبل ذوالفقارعلی۔ عصمت اللہ۔ امان اللہ کانسٹیبل نے راجن پور کے علاقہ کے رہاشی ملازم حسین کے گھر میں گھس کرکے تشدد کرنے کے علاوہ مویشی اور اسلحہ اور دیگر اشیاء اٹھا لیں۔ اور ملازم حسین کوحوالات میں ڈال دیا۔ ایک لاکھ روپے عید کے مطالبہ پورا نہ کرنے پر پولیس نے مللازم حسین پر تشدد کرتے ہوئے ہاتھ پاوں باندھ کرکے پیٹ میں پانی ڈالا۔ جس سے وہ ہلاک ہو گیا۔ ریجنل پولیس افسر ڈیرہ غازی خان نے واقعہ کو نوٹس لیتے ہوئے ایس پی انویسٹی گیشن اور ڈی ایس پی راجن پور پرویز احمد احمدانی۔ ڈی ایس پی چوہدری فیاض الحق پر مشتمل انکوری کمیٹی بنائی۔ کمیٹی نے تین دن کے اندر تمام واقعات اور حالات کا جائزہ لینے کے بعد مفصل رپورٹ ڈی پی اوراجن پور کو پیش کی جس نے ریجنل پولیس افسر ڈیرہ محمد عمران خان کو پیش کر دی ہے۔ار۔ پی او ڈیرہ کے حکم پر پولیس تھانہ سٹی جام پور نے مقتول کے بھائی عبداللہ ولد خان محمد کی مدعیت میں ملزمان ایس ایچ اوسمیت دیگر کے خلاف زیر دفعہ 302/382/452/148/149ت۔ پ مقدمہ درج کرکے مزید کاروائی شروع کر دی۔ ڈی پی او راجن پور نے عارضی طورپر ایس ایچ او سٹی کا چارج نورالحسن ایس ائی کو دے دیا ہے۔ دوسری طر ف ملزمان نے عبوری ضمانت کرانے کے لیے عدالت سے رجوع کر لیا ہے۔ شہریوں نے ار۔ پی او ڈیرہ اور ڈی پی او راجن پور کے اقدامات پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے انصاف کے تقاضا قرار دیا ہے۔ اور مظلوم کی حکومتی ویژن کے مطابق امداد کرنے پر خراج تحسین پیش کیا ہے۔

مقدمہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -