کورونا وباء،فرانس کی عدالت کا مذہبی اجتماعات پرعائد پابندی ختم کرنے کا حکم

  کورونا وباء،فرانس کی عدالت کا مذہبی اجتماعات پرعائد پابندی ختم کرنے کا حکم

  

پیرس (این این آئی)فرانس کی ایک انتظامی عدالت نے حکومت کو آٹھ دن کے اندر عبادت گاہوں میں ہر طرح کے اجتماعا ت پر عائد سخت پابندی ہر صورت ختم کرنے کا حکم دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے پیش نظر حکومت کی طرف (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

سے مذ ہبی ا جتما عات سے متعلق یہ پابندی عائد کی گئی تھی۔کونسل آف سٹیٹ کے مطابق یہ پابندی غیر متناسب نوعیت کی ہے جس سے سخت نقصان ہوا اور یہ ایک غیر قانونی اقدام ہے۔خیال رہے فرانس میں اس وائرس سے اب تک 28 ہزار سے زائد لوگ ہلاک ہوئے ہیں۔ وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کیلئے فرانس کی حکومت نے عبادت گاہوں میں ہر طرح کے اجتماعات پر سخت پابندی عائد کر رکھی ہے، صرف جنازوں میں 20 تک لوگوں کو جمع ہونے کی اجازت ہے۔واضح رہے کہ عدالت نے عبادت گاہوں کو مکمل طور پر کھولنے کا حکم نہیں دیا۔فرانس کی عدالت کے جج نے اپنے فیصلے میں لکھا کہ ان عبادت گاہوں میں دس تک لوگ اکھٹے ہو سکتے ہیں اور یہ کہ صحت عامہ کے تحفظ سے متعلق حکومتی پابندی غیر متناسب تھی۔

فرانس عدالت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -