حکومت لوگوں کو ریلیف دینے کیلئے عملی اقدامات کرے، سید ذیشان اختر

  حکومت لوگوں کو ریلیف دینے کیلئے عملی اقدامات کرے، سید ذیشان اختر

  

بہاول پور(بیورو رپورٹ،ڈسٹرکٹ رپورٹر) نائب امیر صوبہ جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہہ18 ویں آئینی ترمیم اور58-2B کو چھیڑ کر صوبوں کے اختیار ات چھیننے کا خطرناک کھیل کھیلا (بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

جا رہا ہے۔ کچھ عناصر اس میں خطرناک کھیل کھیل رہے ہیں۔ وفاق ہمیشہ ماں کا کردار ادا کرتا ہے اس لیے وفاق کو چاہیے کہ وہ صوبوں کے آئینی حقوق کا تحفظ کرے۔انہوں نے کہا کہ صوبوں کو بحران سے نکالنے کے لیے ضروری ہے کہ آئینی ترمیم کے ذریعے چھوٹے آئینی یونٹس بنائے جائیں تاکہ صوبے اپنے مسائل حل کر سکیں۔ زراعت ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے اس وقت کسان بدحالی کا شکار ہے اور کسان کو اس کی محنت کا صلہ نہیں مل رہا۔ نمائشی اقدامات کی بجائے عملی اقدامات کیے جائیں۔یقینا بجٹ آنے والاہے لیکن اب تک اس کے خد و خال سامنے نہیں آیئے۔ یہ الگ بات ہے کہ سال میں 6 بجٹ آتے ہیں حکومت کو چاہئے کہ وہ بجٹ کے حوالے سے آئینی راستہ اختیار کرئے۔ انہوں نے مذید کہا کہ اس وقت معاشرے میں یہ بات زبان زد عام ہے کہ عام بیماریوں کو کورونا کا نام دیا جا رہے اور مختلف بیماریوں کی اموات کو کورونا کے کھاتے میں ڈالا جا رہا ہے اس حوالے سے قومی پارلیمانی کمیشن بنایا جائے تاکہ کورونا کی صحیح صورتحال قوم کے سامنے آ سکے۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -