عمرکوٹ پولیس نے نایاب نسل کےقیمتی 18 ہرن سملنگ کرنے کی کوشش ناکام بنادی

عمرکوٹ پولیس نے نایاب نسل کےقیمتی 18 ہرن سملنگ کرنے کی کوشش ناکام بنادی
عمرکوٹ پولیس نے نایاب نسل کےقیمتی 18 ہرن سملنگ کرنے کی کوشش ناکام بنادی

  

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر  )عمرکوٹ پولیس نے نایاب نسل کےقیمتی 18 ہرن سملنگ کرنے کی کوشش ناکام بنادی , عمرکوٹ پولیس نے سامارو موڑ چیک پوسٹ پر چیکنگ کے دوران ایک  کار سے 18 نایاب نسل کے ہرن برآمد کرلیے , پولیس نے تین افراد اوربرآمدکیےگئے ہرن    کو اپنی تحویل میں لے لیا۔ 

تفصیلات کےمطابق عمرکوٹ پولیس نے سامارو موڑپرچیکنگ  کےدوران گاڑی نمبرBLL  -645گاڑی کوچیکنگ کےلیےروکاتوگاڑی میں سے نایاب نسل کے  اٹھارہ قیمتی ہرن برآمد کرکے تین افراد  جن میں اویس پٹھان، ذیشان شیخ، کاشف شامل ہے کواور برآمدکیےگئے ہرن کو پولیس نےاپنی تحویل میں لےلیاہے ۔

بتایاجارہاہے کہ یہ نایاب نسل کےہرن صحرائے تھرسے  حیدرآباد سملنگ کیے جارہے تھے یہ امر قابل ذکرہےکہ صحرائے تھرسے  ہرن کے شکار اور سملنگ کے باعث ہرن کی نسل کوشدید خطرات لاحق ہےاورہرن کی  نسل آہستہ آہستہ ختم ہورہی ہے کچھ عناصر اپنے کاروبار اور مفادات کی  خاطر ہرن کی اسمگلنگ کاگھناؤنا کھیل کھیل رہے ہیں مارکیٹ میں ایک  نایاب نسل  ہرن کی  قیمتی جوڑی اسی ہزارسے   ایک لاکھ روپے   تک کی فروخت کی جاتی ہے اورکچھ شکاری حضرات ہرن کا شکارکرکے ہرن کا گوشت پندرہ سو  سے   دوہزار روپے تک فروخت کیاجاتاہے ۔

پولیس ذرائع کاکہناہےکہ مذکورہ افراد  جنگل میں ہرن زخمی کرنے کے بعد پکڑ کر حیدرآباد سملنگ کر رہے تھے آخری اطلاعات تک ایف آئی آر درج نہیں ہوئی     تھی پولیس سے جوڑتوڑ کی کوششیں جاری ہے.

مزید :

علاقائی -سندھ -عمرکوٹ -