ہم جنس پرست نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے والے لڑکے اور لڑکی کی تصاویر جاری

ہم جنس پرست نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے والے لڑکے اور لڑکی کی تصاویر جاری
ہم جنس پرست نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے والے لڑکے اور لڑکی کی تصاویر جاری

  

مانچسٹر(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی پولیس نے ہم جنس پرست نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنانے والے لڑکے اور لڑکی کی تصاویر جاری کر دیں۔ میل آن لائن کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ 22سالہ مورگن فیور اپنے پارٹنر کے ساتھ باہر گھوم رہا تھا۔ اس کا پارٹنر کسی وجہ سے جلدی چلا گیا اور وہ اکیلا رہا تھا۔ اسے اکیلا پر کر اس لڑکے لڑکی نے اس پر حملہ کر دیا۔

پولیس کے مطابق لڑکا لڑکی اسے ہم جنس پرستی کے طعنے دے رہے تھے، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ ہوموفوبیا(ہم جنس پرستوں سے نفرت)کا کیس ہے۔ تشدد سے مورگن فیور کے سر میں شدید چوٹ آئی اور اس کے دماغ میں خون بہنے لگا۔ اس کے علاوہ اس کی ناک، آنکھ اور رخسار کی ہڈیاں بھی ٹوٹ گئیں۔ اس کی حالت ایسی تشویشناک تھی کہ اسے 10دن تک ہسپتال میں زیرنگرانی رکھا گیا۔ 

پولیس نے مورگن پر تشدد کے واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی حاصل کر لی ہے تاہم اب تک ملزمان کو گرفتار کرنے میں ناکام ہے۔ پولیس کی طرف سے ملزم لڑکے لڑکی کی تصاویر جاری کرتے ہوئے شہریوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ ان کی گرفتاری میں پولیس کی مدد کریں۔ 

مزید :

بین الاقوامی -