کسٹمز ڈیوٹی کو70روپے کلو سے کم کیا جائے، ناصر حمید خاں

کسٹمز ڈیوٹی کو70روپے کلو سے کم کیا جائے، ناصر حمید خاں

لاہور(کامرس رپورٹر ) تاجررہنما و ممبرسینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی پاکستان آٹوموبائل سپیئر پارٹس امپورٹس اینڈ ڈیلرز ایسوسی ایشن محمد ناصر حمیدخاں چیئرمین انٹر سمگلنگ کمیٹی لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے کہا ہے کہ جب ایک سمگلر 70روپے کلو دے کر چائنہ سے پاکستان مال لے آتا ہے تو ایک محب وطن تاجر190روپے کلو کسٹمز ڈیوٹی دے کر اس کا مارکیٹ میں کیسے مقابلہ کرسکتا ہے،انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت کسٹمز ڈیوٹی کم کرے او ر اچھے تاجروں کو مارکیٹ میں کاروبار کرنے کے مواقع فراہم کئے جائیں،انہوں نے وزیر خزانہ کی لاہور چیمبر میں کی گئی تقریر پر تنقید کرتے ہوئے حقائق سے پردہ ہٹایا کہ انڈرانوائس کا رونا رونے سے مسائل حل نہیں ہونگے،جب تمام اشیاءکلوگرام نظام میں کسٹمز سے کلیر ہوتی ہیں تو پھر انڈر انوائسنگ کیسے ممکن ہے ان مسائل کا حل صرف اسی صورت میں ہے کہ کسٹمز ڈیوٹی کو70روپے کلو گرام سے نیےچے لایا جائے۔ا س میں محب وطن تاجر کا کیا قصور ہے کہ وہ 190روپے کلو گرام کے حساب سے کسٹمز ڈیوٹی دے کر حکومتی خزانے میں اضافہ کرتے ہیں اوروہ ایک سمگلر کاجو حکومتی خزانے کا چور ہے کا بھی مارکیٹ میں مقابلہ نہیں کرسکتے۔ناصر حمید خان نے کہا کہ اس مسئلہ کو ہنگامی بنیادوں پرترجیح دیتے ہوئے حل کیا جائے۔اور محب وطن تاجروں کو سڑکوں پر آنے پر مجبور نہ کیا جائے۔انہوں نے کسٹمز حکام کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اگر ایماندار کسٹمز افسران کو ڈیوٹی سونپ دی جائے تو ایک سوئی کی بھی سمگلنگ ممکن نہیں۔

کسٹمز کے کرپٹ افسران رشوت لے کر سمگلنگ کا مال چھوڑ دیتے ہیں اور مارکیٹوں میںایماندار تاجروں کو پریشان کیا جارہا ہے۔انہوںنے تنبیہ کی کہ اگر تاجر برادری کے مسائل کو مذاکرات کی میز پرحل نہ کیا گیا تو تاجر برادری سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوجائے گی۔انہوں نے کہا کہ ہر مسئلہ کا حل احتجاج کے بعد نکالنے کی بجائے حکومت اس مسئلہ کوفوری حل کرے۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...