سید علی گیلانی کی دوبارہ گھر میں نظربندی کی مذمت

سید علی گیلانی کی دوبارہ گھر میں نظربندی کی مذمت

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیںحریت رہنماءزمردہ حبےب نے بزرگ کشمیری حریت رہنماءسےد علی گےلانی کی دوبارہ گھر میں نظربندی کی شدید مذمت کرتے ہوئے ان بلا جواز پا بندےوں کو سےاسی آزادی پر قدغن اور جمہوری ا قدارکے منافی اور غےر انسانی عمل قراردیا ہے جس کی کسی بھی مہذب معاشرے میں کوئی جگہ نہےںہے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق زمردہ حبےب نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں سےدعلی گےلانی کی دوبارہ گھر میںنظر بندی کو قابض انتظامیہ کی بوکھلاہٹ قراردیتے ہوئے ان کی نقل وحرکت پر عائد پابندےاںا ور قد غن اٹھانے اور ان کی رہائش گاہ کے باہر تعینات پولیس کو فور۱ً ہٹانے کامطالبہ کیا ۔

انہوںنے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ اس حساس انسانی مسئلے کا سخت نوٹس لے کہ قابض انتظامیہ بزرگ رہنماءکو سےاسی انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے ۔انہوںنے غیر قانونی طورپر نظربند تمام کشمیریوں کی رہائی کا بھی مطالبہ کیا ۔

مزید : عالمی منظر