پاکستان ہاکی فیڈریشن کے قاسم ضیاءاور آصف باجوہ صدارتی انتخابات سے دستبردار

پاکستان ہاکی فیڈریشن کے قاسم ضیاءاور آصف باجوہ صدارتی انتخابات سے دستبردار

لاہور ( سپورٹس رپورٹر ) پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر قاسم ضیاءاور سابق سیکرٹری آصف باجوہ نے فیڈریشن کے صدارتی انتخابات سے دستبردار ہونے کا اعلان کر دیا۔ نیشنل ہاکی سٹیڈیم میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قاسم ضیاءنے کہا کہ حکومت کی تبدیلی کے بعد میرے لئے فیڈریشن کے معاملات چلانا ممکن نہیں رہا لہذا میں نے آئندہ مدت کے لئے الیکشن میں حصہ نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابق اولمپئنز پی ایچ ایف کی صدارت کا الیکشن لڑنے کے اہل ہیں اگر وہ خود کو اس عہدہ کے لئے موزوں سمجھتے ہیں تو صدارتی انتخاب میں حصہ لیں۔ انہوں نے کہا کہ فیڈریشن کا سالانہ خرچہ بیس سے بائیس کروڑ روپے ہے جبکہ پاکستان سپورٹس بورڈ کی جانب سے ملنے والی گرانٹ صرف ساٹھ لاکھ روپے ہے ، غیر ملکی ٹیموں کے نہ آنے سے فیڈریشن کی آمدنی کا کوئی ذریعہ بھی نہیں رہا۔ ایک سوال پر قاسم ضیاءکا کہنا تھاکہ پی ایچ ایف کے انتخابات میں تمام لوگوں کو یکساں موقع فراہم کئے جن لوگوںکو تحفظات ہیں وہ الیکشن کمیشن سے رجوع کریں۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ فیڈریشن سے وابستہ کسی شخص نے انتخابات میں مداخلت نہیں کی اور اس حوالہ سے الزامات میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ اس موقع پر آصف باجوہ نے بھی پی ایچ ایف کی صدارت کا امیدوار نہ ہونے کا اعلان کیا ان کا کہنا تھا کہ میں نے پہلے بھی کئی باراس عہدہ پر الیکشن میں حصہ نہ لینے کا اعلان کر چکا ہوں۔ جونیئر ورلڈ کپ کے حوالہ سے ٹیم کی کامیابی کے امکانات بارے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے قاسم ضیاءکا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں قومی ٹیم کے کھلاڑی بھار ت میں کھیلتے ہوئے دباﺅ کا شکار ہوں گے، ہمارے کھلاڑیوں کو بھارت میں لیگ کھیلنے سے روکا گیا لیکن ہم پر امید ہیں کہ کھلاڑی ورلڈ کپ میں عمدہ کارکردگی دکھاتے ہوئے سیمی فائنل کیلئے ضرور کوالیفائی کریں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی